ایم کیو ایم نے کوئی پلاٹ، نالہ نہیں چھوڑا، مزید کھانے نہیں دینگے: پی پی کا اعلان

کراچی: ( ٹیسکو نیوز) ایم کیو ایم پھر الزمات کی زد میں ہے۔ پی پی رہنماء سعید غنی نے پریس کانفرنس تو پارٹی میں شمیولیت اختیار کرنے کے حوالے سے بلائی تھی مگر متحدہ کا تذکرہ ہوا تو جم کر برسے، کہنے لگے ایم کیو ایم والے شور اتنا مچاتے ہیں کہ لوگ سچ سمجھنا شروع کر دیتے ہیں، بولے صفائی کا کام کے ایم سی کا نہیں ڈی ایم سی کا ہے، جن کے پاس عملہ اور گاڑیاں سب موجود ہیں۔پی پی سینیٹر نے متحدہ دور میں گھوسٹ ملازمین بھرتی کرنے کا الزام بھی عائد کیا، کہتے ہیں کے ایم سی، واٹر بورڈ اور کے ڈی اے میں ملازمین کی تعداد 2005ء میں 16 ہزار تھی، گھوسٹ ملازمین بھرتی ہونے سے مصطفیٰ کمال کے دور میں ملازمین کی تعداد بڑھ کر 60 ہزار ہو گئی۔سعید غنی نے مزید کہا کہ یہ لوگ تنخواہیں حکومت سے لیتے ہیں اور کام ایم کیو ایم بانی لیتے تھے۔