خانہ شماری کا عمل آج دوسرے روز بھی جاری رہے گا

لاہور ( ٹیسکو نیوز) سکیورٹی کے حوالے سے کئے جانے والے اقدامات پر شہریوں کا اظہار اطمینان، معذور افراد کے اندراج کیلئے ترامیم کا حکم ملک بھر میں خانہ شماری کا عمل آج دوسرے روز بھی جاری رہے گا ، سول اور فوجی عملے کی جانب سے عمارتوں کی گنتی جاری رہے گی ۔ مردم شماری فارم میں معذور افراد کو نظر انداز کیے جانے پر ہائی کورٹ کے چیف جسٹس منصور علی شاہ نے برہمی کااظہار کیا ہے ۔ انہوں نے فارم میں فوری ترمیم کا حکم دیدیا ۔ چیف جسٹس منصور علی شاہ نے مردم شماری میں معذور افراد کو نظر انداز کرنے سے متعلق تحریری فیصلہ جاری کر دیا ۔ معذور افراد اور خواجہ سرائوں کے لیے ہاتھ کے ساتھ ہندسوں میں مردم شماری کے فارم میں درج کیا جائے ۔ معذور مرد کے لیے 4 معذور خاتون کے لیے 5 اور معذور خواجہ سرا کے لیے 6 کا ہندسہ فارم پر درج کیا جائے ۔ چیف جسٹس نے فیصلہ میں یہ بھی قرار دیا کہ مردم شماری فارم میں بھی معذور افراد کو دیوار کے ساتھ لگانے کی اجازت نہیں دے سکتے ۔ چیف جسٹس منصور علی شاہ نے واضح کیا کہ معذور افراد کا تحفظ انتہائی ضروری ہے ۔ مردم شماری میں معذور افراد کو کسی صورت نظر انداز نہیں کیا جا سکتا اگر یہ پتہ چل جائے کہ پاکستان میں کتنے معذور اور کتنے خواجہ سرا ہیں یہ بہت بڑی نیکی ہوگی ۔ چیف جسٹس منصور علی شاہ نے محکمہ شماریات کو مردم شماری فارم میں فوری طور پر ترمیم کا حکم جاری کر دیا