شالیمارایکسپریس حادثے کی ابتدائی تحقیقاتی رپورٹ میں اسٹیشن ماسٹر ذمہ دار قرار

شیخوپورہ ( ٹیسکو نیوز) ریلوے حکام نے ٹرین حادثے کی ابتدائی تحقیقاتی رپورٹ تیار کرلی جس میں اسٹیشن ماسٹر کو حادثے کا ذمہ دار قرار دے دیا گیا ہے۔ایکسپریس نیوز کے مطابق شالیمار نائٹ کوچ ٹرین حادثے کی ابتدائی رپورٹ میں اسٹیشن ماسٹر کو ذمہ دار قرار دیا گیا ہے۔ ابتدائی تحقیقاتی رپورٹ کے مطابق گیٹ مین نے اسٹیشن ماسٹر کو پھاٹک پر ٹینکر کے پھنسے ہونے کی بروقت اطلاع دی تھی جس پر اب یہ پتہ چلایا جا رہا ہے کہ اسٹیشن ماسٹر نے لاہور انتظامیہ کو ٹرین روکنے کی درخواست کی تھی یا نہیں۔ریلوے حکام نے واضح کیا ہے کہ ابھی تحقیقات ابتدائی مرحلے میں ہے اس لیے اسے حتمی رپورٹ نہ سمجھا جائے، تحقیقات مکمل اور حقائق سامنے آنے میں 24 سے 48 گھنٹے لگ سکتے ہیں اور تحقیقاتی رپورٹ مکمل کرنے کے بعد جلد وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف کوپیش کی جائے گی۔

شیخوپورہ میں شالیمار ایکسپریس اور آئل ٹینکر میں تصادم

ٹرین حادثے میں گیٹ کیپر کا بیان سب سے اہم ہے جو ریلوے حکام کی حفاظتی تحویل میں ہے جب کہ میڈیا سے گفتگو میں گیٹ مین بتا چکا ہے کہ اس نے کیبل مین کو آئل ٹینکر کے بارے میں بتا دیا تھا۔ دوسری طرف شیخوپورہ کے اسٹیشن ماسٹر کا کہنا ہے کہ اسے ٹینکر کا پتہ تب چلا جب ٹرین اسٹیشن سے گزر چکی تھی۔
واضح رہے لاہور سے کراچی جانے والی شالیمار ایکسپریس شیخوپورہ میں اتوار اور پیر کی درمیانی شب ریلوے پھاٹک پر پھنسے آئل ٹینکر سے ٹکراگئی تھی جس سے ٹرین کی بوگیوں میں آگ لگ گئی جب کہ حادثے میں ٹرین کا ڈرائیور اور اسسٹنٹ ڈرائیور سمیت 3 افراد جاں بحق اور کئی مسافر زخمی ہوئے۔