مخصوص مفادات کیلئے ریلوے کو ٹارگٹ کیا جا رہا ہے: سعد رفیق

لاہور (سٹاف رپورٹر) وفاقی وزیر ریلویز خواجہ سعد رفیق کو پاکستان ریلویز ہیڈ کوارٹرز آفس لاہور میں منعقدہ اعلی سطح کے اجلاس میں ڈویژنل سپرنٹنڈنٹ لاہورمحمد سفیان ڈوگر نے شیخوپورہ حادثے کی تحقیقات میں پیش رفت کے بارے بریفنگ دی۔ ابتدائی رپورٹ کے مطابق گیٹ مین نے غیر معمولی وقت ضائع کیا جبکہ اسے ایکسل ٹوٹنے کا علم ہونے کے بعد وقت کا دانشمندانہ استعمال کرتے ہوئے نائیٹ کوچ کو روکنے کے لیے بروقت اطلاع پہنچانی چاہیے تھی۔ وزیر ریلویز کو بتایا گیا کہ جس وقت گیٹ مین نے سگنل اپ کرنے کے لیے اطلاع دی اس وقت ٹرین سگنل کراس کرچکی تھی۔ انجن کے معائنے سے ثابت ہواکہ ٹرین ڈرائیور نے بریک لگانے کی کوشش کی مگر گاڑی پوری طرح نہ رک سکی۔ خواجہ سعد رفیق نے کہا کہ حادثے میں نقصان بھی پاکستان ریلویز کا ہوا اور مخصوص مفادات کے لیے ٹارگٹ بھی پاکستان ریلویز جیسے قومی ادارے کو بنایا جارہاہے جوقابل افسوس ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان ریلویز کے افسران اس کی بہتری کے لیے دن رات کام کررہے ہیں ، وہ حوصلہ مت ہاریں، ہم پاکستانی قوم کو ایک جدید اور محفوظ ریلوے دینے کا عہدپورا کریں گے۔ اجلاس میں بتایا گیا کہ چینی ساختہ انجن اور بوگیوں کی مرمت کا تخمینہ تیار کیا جارہا ہے ۔ خواجہ سعد رفیق نے کہا کہ مالی نقصان سے بڑا نقصان یہ ہے کہ ہمارے دوتجربہ کار کارکن اس حادثے میں شہید ہوگئے۔ یہ نقصان ناقابلِ تلافی ہے۔ ۔ خواجہ سعد رفیق نے کہا کہ ریلوے ہیڈکوارٹرز کی عمارت بھی ایک بڑا تاریخی اثاثہ ہے اس کی حفاظت ، مضبوطی اور خوبصورتی کے لیے پاکستان ریلویز تمام ممکنہ اقدامات کرے گا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں