مصالحتی سینٹر کی مقبولیت میں اضافے کے باعث ججز کی تعداد بڑھانے کا فیصلہ

لاہور ( جیوعوام ) چیف جسٹس منصور علی شاہ نے کہا ہے کہ عدلیہ میں اصلاحات کے لئے بیس کروڑ روپے کی رقم خرچ کر کے انٹرپرائز سسٹم متعارف کرایا جا رہا ہے جس کے تحت بین الاقوامی معیار کا آئی ٹی نظام لانچ کیا جا رہا ہے، مصالحتی سینٹر کی مقبولیت میں اضافے کے باعث ججز کی تعداد بڑھانے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔
پنجاب کی ماتحت عدلیہ کو چیف جسٹس منصور علی شاہ نے مکمل طور پر فعال کر دیا۔ وکلاء اور سائلین کی مشکلات کو مدنظر رکھتے ہوئے 6 اپریل کو آئی ٹی سسٹم کو اپ گریڈ کر دیا جائیگا۔ کریمنل جسٹس سسٹم پائلٹ پراجیکٹ کے تحت پنجاب کے چھ ماڈل اضلاع کی سیشن عدالتوں نے یکم فروری سے اکتیس مارچ کے دوران بارہ سو چورانوے فوجداری مقدمات نمٹائے۔ چیف جسٹس منصور علی شاہ کا کہنا ہے کہ اولین ترجیح سائلین کو انصاف کی بروقت فراہمی یقینی بنانا ہے۔ مصالحتی سینٹر پر سائلین اور وکلاء کے بڑھتے ہوئے اعتماد کے باعث ججز کی تعداد بڑھانے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔