راو لپنڈی: ڈیڑ ھ ماہ کی بچی مبینہ طور پر ماں کے ہاتھوں قتل، ملزمہ گرفتار

راولپنڈ ی ( ٹیسکو نیوز ) تھانہ سول لائن کے علاقہ ٹاہلی موہری میں قتل کی لرزہ خیز واقعہ میں ڈیڑھ ماہ کی بچی کو قتل کردیا گیا۔ پولیس نے بچی کے قتل کے جرم میں اسکی 23 سالہ ماں کو گر فتار کرلیا جبکہ باپ سے بھی پوچھ گچھ جاری ہے۔ ایس ایچ او سول لائن میاں عمران کے مطابق ڈیڑھ ماہ کی بچی فضہ کو گھریلو استعمال کی چھری سے سینے اور پیٹ میں ضربیں لگائی گئیں جس ننھی فضہ دم توڑ گئی۔ بچی کا باپ عدنان ایک سرکاری ادارے میں کلاس فور کا ملازم ہے جو قتل کے وقت ناشتہ لینے گھر سے باہر گیا ہوا تھا، واپس آنے پر اسے علم ہوا کہ اسکی بیٹی مرچکی ہے۔ خاوند نے اپنی اہلیہ مہوش پر الزام لگایا کہ اسکی بیوی کا ذہنی توازن درست نہیں تھا جس کی وجہ سے اس نے بیٹی کو چھری کے وار کر کے قتل کردیا۔ پولیس نے مہوش اور اسکے خاوند کو تحویل میں لیکر تفتیش کردی۔ مہوش کا کہنا ہے کہ اسکے شوہر نے بیٹی کو قتل کیا جبکہ اس بات کا بھی اقرار کرتی ہے کہ شاید اس نے ہی اپنی لخت جگر کو موت کی نیند سلایا ہو۔ پولیس کا کہنا ہے کہ متضاد بیان کی تحقیق کیلئے مہوش کا طبی معائنہ کرایا جانا ضروری ہے جبکہ کچھ دستاویزات ایسی بھی ملی ہیں جن سے مہوش کی دماغی حالت ظاہر ہوتی ہے تاہم طبی ماہرین کی حتمی رپورٹ اہم کردار ادا کر یگی۔ عدنان اور مہوش کی شادی سوا سال پہلے ہوئی تھی اور فضہ انکی پہلی بیٹی تھی۔ مزید تحقیقات جاری ہیں۔