سپریم کورٹ: محکمہ اینٹی کرپشن پنجاب میں بھرتیوں کا عمل منسوخ کرنیکا حکم

اسلام آباد (جیوعوام) محکمہ اینٹی کرپشن پنجاب میں ہی کرپشن، ڈپٹی ڈائریکٹرز کی تعیناتی میں امتیازی سلوک کا مظاہرہ کرتے ہوئے خواتین کو زیرغور لایا ہی نہیں گیا۔ سپریم کورٹ نے بھرتیوں کے عمل کو منسوخ کرنے کا حکم دے دیا۔ چراغ تلے اندھیرا۔ محکمہ اینٹی کرپشن میں بھی بڑی کرپشن کا انکشاف ہوا ہے۔ محکمہ اینٹی کرپشن پنجاب میں غلط بھرتیوں کے معاملے کی سماعت کے موقع پر جسٹس شیخ عظمت سعید نے ریمارکس دیئے کہ اینٹی کرپشن پنجاب نے بھرتیوں کے عمل میں سنگین غلطی کی، خواتین کو زیرغور نہ لانا بنیادی حقوق کا معاملہ ہے۔ انہوں نے استفسار کیا کہ کیا پنجاب میں خواتین کو نوکری نہ دینے کا قانون ہے؟ عدالت نے حکم دیا کہ بھرتیوں کے عمل کو سکریپ کرکے دوبارہ اشتہار دیا جائے۔ اینٹی کرپشن پنجاب کے وکیل نے بھرتیوں میں غلطی کو تسلیم کرتے ہوئے استدعا کی کہ اسے اپنے مؤکل سے ہدایت لینے کے لئے وقت دیا جائے، عدالت نے مقدمے کی مزید سماعت 12 اپریل تک ملتوی کر دی