مارچ 2017 سیمنٹ کی فروخت کے ریکارڈ ٹوٹ گئے

( ٹیسکو نیوز) سیمنٹ کی فروخت مارچ 2017میں ریکارڈ سطح پر پہنچ گئی. تقریبا 4ملین ٹن سیمنٹ کی فروخت کے ساتھ پیداواری استعداد 101فیصد رہی تاہم مارچ 2016کے مقابلے میں برآمدات 60.39فیصد کم رہیں۔آل پاکستان سیمنٹ مینوفیکچررز ایسوسی ایشن نے کہا کہ مقامی طلب میں اضافے نے پیداواری گنجائش میں مزید اضافے کیلیے کوششوں کو درست ثابت کردیا ہے. ملک میں پائیدار انفرااسٹرکچر سرگرمیوں کی ضرورت ہے جو تقریبا 10برس تک جاری رہیں تاکہ دیگر ملکوں سے انفرااسٹرکچر کے حوالے سے ان کے قریب پہنچ سکیں. سیمنٹ انڈسٹری اس ضمن میں اپنا کردار ادا کررہی ہے. مارچ 2017میں3.964ملین ٹن سیمنٹ فراہمی کی گئی جبکہ گزشتہ برس اس عرصے میں 3.583ملین ٹن سیمنٹ فروخت کی گئی تھی. گزشتہ ماہ مقامی فروخت سال بہ سال 23فیصدبڑھی۔دوسری جانب اے پی سی ایم اے کے مطابق پاکستانی سیمنٹ کی مجموعی کھپت رواں مالی سال کے ابتدائی 9ماہ کے دوران6.90فیصد کے اضافے سے 30.304ملین ٹن رہی جو اس عرصے کیلیے اب تک کی بلند ترین سطح ہے، اسمگلنگ اور انڈرانوائسنگ پر قابو پالیا جاتا تو اس حجم میں مزید اضافہ ممکن تھا. مقامی کھپت میں 10.90فیصد کا اضافہ ہوا لیکن برآمدات میں 14.83فیصد کمی ہوئی ہے۔