نیب افسران بدعنوانی کے خاتمہ کیلئے کوششیں دوگنا کردیں، چیئرمین قمر زمان

اسلام آباد(روزنامہ نیا وقت) چیئرمین نیب قمر زمان چوہدری نے کہا ہے کہ نیب ”زیرو کرپشن، سو فیصد ترقی“ پر یقین رکھتا ہے، نیب کے افسران زیرو ٹالرنس پالیسی پر عمل پیرا ہوتے ہوئے بدعنوانی کے خاتمہ کیلئے اپنی کوششیں دوگنا کر دیں اور اپنے قومی فرائض کی ادائیگی میں مکمل شفافیت کو شعار بنائیں، تفصےلات کےمطابق انہوں نے ان خےالات کا اظہار نیب ہیڈ کوارٹرز میں نیب کی پیشرفت کے جائزہ اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کےا، انہوں نے کہا کہ نیب کا ادارہ شکایت پر کارروائی عمل میں لاتا ہے، ادارہ کا عملی طریقہ کار کیسز پر کارروائی کیلئے شکایت کی تصدیق، انکوائری اور انوسٹی گیشن کے تین مراحل پر مشتمل ہے، نیب کو 22 ارب روپے کے مضاربہ کیس میں 40 ہزار شکایات موصول ہوئیں، مضاربہ کیس کے علاوہ شکایات، انکوائریز اور انوسٹی گیشن کے اعداد و شمار 2016ءکے اسی عرصہ کے مقابلہ میں 2017ءمیں تقریباً دوگنا ہیں۔ قمر زمان چوہدری نے کہا کہ نیب کیلئے یہ امر حوصلہ افزاءہے کہ پلاننگ کمیشن آف پاکستان نے پہلی مرتبہ انسداد بدعنوانی کو گورننس کے تناظر میں پاکستان میں ترقیاتی ایجنڈے کا حصہ بنایا ہے اور 11 ویں پانچ سالہ منصوبہ میں بدعنوانی کے ایشوز کیلئے ایک خصوصی باب شامل کیا ہے تاکہ بدعنوانی کے انسداد کیلئے 11 ویں پانچ سالہ منصوبہ میں مقررہ اہداف حاصل کئے جا سکیں۔ بدعنوانی کے خلاف ملک گیر مہم میں نیب کے ساتھ مزید یونیورسٹیاں اور کالجز شامل ہو رہے ہیں، نیب نے 2017ءکے دوران ملک بھر میں کم از کم 50 ہزار ایسی انجمنیں قائم کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔