گرمی میں اضافے کے ساتھ ہی لوڈشیڈنگ بھی بے قابو

لاہور (ٹیسکو نیوز ) ہفتے کی رات سے شروع ہونے والا بجلی کی آنکھ مچولی کا کھیل ابھی تک جاری ، 3900 میگا واٹ کا شارٹ فال کیسے دور ہوگا کسی کو معلوم نہیں گرمی نے قدم جمائے تو ساتھ ہی بجلی کی لوڈشیڈنگ نے شکنجہ کس لیا ، لاہور سمیت پنجاب کے بڑے شہروں میں آٹھ سے دس گھنٹے تک شہری بجلی کی سہولت سے مکمل طور پر محروم رہتے ہیں ۔ گرمی تو گرمی ہے اس نے آنا ہی ہے ۔ اس کی شدت کا احساس اُس وقت بڑھ جاتا ہے جب بجلی آپ کا ساتھ چھوڑ جائے ۔ لاہور میں ویک اینڈ پر ہی ہفتے کی رات سے شروع ہونے والی آنکھ مچولی کا کھیل چھٹی کے روز بھی جاری ہے ۔ لوڈشیڈنگ جیسے شہریوں کے معمول کا حصہ بن گئی ہے ۔ گھروں میں گرمی کے ستائے بڑے بچوں کا ایک گھنٹے بعد بجلی آنے کا انتظار جب طول پکڑتا ہے تو پھر پریشانی کا شمار مشکل ہو جاتا ہے ۔ ملتان ، فیصل آباد ، سمیت پنجاب کے دیگر شہروں میں بھی بجلی آنے اور جانے کا شیڈول کسی کو معلوم نہیں ۔ شہروں میں آٹھ سے دس گھنٹے اور دیہی علاقوں میں یہ وقفہ زیادہ ہے ۔ بجلی کی طلب 15800 میگا واٹ اور رسد 11900 میگاواٹ ہے ۔ 3900 میگا واٹ کا شارٹ فال کیسے دور ہوگا ، کم از کم گرمی کے مارے شہریوں کو کچھ علم نہیں ہے ۔