ملک بھر کے عوام کشمیریوں سے اظہار یکجہتی کیلئے آج گھروں سے نکلیں گے

اسلام آباد: وزیراعظم عمران خان کی اپیل پر ملک بھر کے عوام کشمیریوں سے اظہار یکجہتی اور مقبوضہ کشمیر کے لوگوں کو واضح پیغام بجھوانے کیلئے آج گھروں سے نکلیں گے۔

دوپہر 12 سے ساڑھے 12 بجے تک ٹریفک کو بھی روک دیا جائے گا۔ وزیراعظم عمران خان وزیراعظم سیکریٹریٹ کے سامنے اجتماع کی قیادت کریں گے جبکہ ملک بھر کے تمام اضلاع میں بھارتی ظلم کے خلاف احتجاج کیا جائے گا۔

‘کشمیر آور’ کی مرکزی تقریب شاہراہ دستور پر ہو گی جہاں وزیراعظم عمران خان ارکان پارلیمنٹ کے ہمراہ پہنچیں گے۔ وزیراعظم پارلیمنٹ ہاؤس کے لان میں طلبہ اور نوجوانوں سے خطاب کریں گے۔

وزیراعظم عمران خان کی کال پر پاکستانی قوم مقبوضہ کشمیر کے مظلوم عوام کے ساتھ اظہار یکجہتی کیلئے جمعے کو سڑکوں پر نکلے گی۔

ملک بھر میں جمعہ کے روز دن بارہ بجے سے ساڑھے بارہ بجے تک کشمیر آور منایا جائے گا۔ سرکاری پروگرام کے مطابق دن کے 12 بجتے ہی وفاقی دارالحکومت کی تمام شاہراہوں پر ٹریفک سگنل سرخ ہو جائیں گے اور قومی ترانے کے ساتھ کشمیر کا ترانہ بھی پڑھا جائے گا۔

کشمیر آور کی مرکزی تقریب اسلام آباد کی شاہراہ دستور پر ہو گی جہاں وزیراعظم عمران خان ارکان پارلیمنٹ کے ہمراہ پہنچیں گے۔ وزیراعظم پارلیمنٹ ہاؤس کے لان میں طلبہ اور نوجوانوں سے خطاب کریں گے۔

بارہ بجتے ہی تمام شاہراہوں پر کشمیریوں سے اظہار یکجہتی کیلئے بھرپور احتجاج کیا جائے گا جب کہ سرکاری ملازمین دفاتر سے نکل کر ڈی چوک میں کشمیریوں سے اظہار یکجہتی کریں گے۔ وزراء اور تحریک انصاف کے قائدین بھی ڈی چوک میں جمع ہوں گے۔

دوسری جانب حکومت نے قومی اسمبلی میں پارلیمانی سال کے آغاز پر بلایا گیا پارلیمنٹ کا مشترکہ اجلاس بھی مؤخر کر دیا ہے۔

ملک بھر کے تمام اضلاع میں احتجاج کیا جائے گا اور احتجاج کیلئے جگہ کے تعین کیلئے ڈپٹی کمشنرز کو ٹاسک سونپ دیا گیا۔ وزیراعظم کی ہدایت پر عوامی نمائندے اپنے اپنے حلقوں میں احتجاج کی قیادت کریں گے جبکہ احتجاج کیلئے سول سوسائٹی اور طلباء کو بھی دعوت دی گئی ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں