امریکی ڈاکٹر نے کورونا کے 699 مریضوں کا کامیاب علاج کر لیا

امریکی ڈاکٹر نے کورونا کے 699 مریضوں کا کامیاب علاج کر لیا۔تفصیلات کے مطابق نیویارک میں بورڈ سے تصدیق شدہ فیملی پریکٹیشنر ڈاکٹر ولادیمیر زیلینکو نے کورونا وائرس کے سیکڑوں مریضوں کا کامیاب علاج کیا،ڈاکٹر ولایمیر نے مریضوں کے علاج کے لیے ہائیڈروکسائکلوروکین hydroxychloroquine کو ایزیتومائکسن (زی-پاک) (azithromycin Z-Pak) اور زنک سلفیٹ کے ساتھ ملا کر دیا ،ڈاکٹر کا کہنا تھا یہ دوائی دینے کے چار سے چھ گھنٹے کے بعد انہوں نے مریضوں میں سانس کے مسئلے میں بہتری آنے کی علامات محسوس کیں۔
ڈاکٹر ولادیمیر زیلینکو نے اسی دوا کے ساتھ نیویارک میں 699 کوویڈ 19 مریضوں کا کامیابی کے ساتھ علاج کر لیا ہے۔انہوں نے ایک انٹرویو کے دوران اپنے تجربات شئیر کرتے ہوئے بتایا کہ انہوں نے 699 مریضوں کا علاج کیا جن میں سے کسی کی بھی موت واقع نہیں ہوئی اور نہ ہی کسی کی طبعیت مزید بگڑی۔

جب کہ چار مریض زیر علاج ہیں۔ڈاکٹر ولادیمیر کے مطابق اس دوا پر 20 امریکی ڈالر خرچ ہوتے ہیں۔

جب کے مریض پانچ دن میں 100 فیصد صحتیاب ہو جاتا ہے۔انہوں نے اس بات کو اپنی کامیابی قرار دے دیا کی اس علاج کے دوران کوئی بھی موت واقع نہیں ہوئی۔ڈاکٹر نے اپنے ویڈیو پیغام میں امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ سے درخواست کی کہ وہ عوام کو بھی یہی دوا لینے کی نصیحت کریں۔نیشنل انسٹی ٹیوٹ آف ہیلتھ (NIH) کے مطالعے نے بھی ڈاکٹر ولادمیر زیلینکو کے کچھ نتائج کی تصدیق ہے۔
مطالعے نے ثابت کیا کہ ڈاکٹر ولادمیر کی دوا سے وہ بچے جنہیں سانس لینے میں تکلیف محسوس ہوتی ہے، ان کی سانس کی نالی کے انفیکشن میں بہتری آئی ہے۔