پاکستان میں کورونا وائرس سے صحت یاب ہونے والے پہلے شخص نے اپنا پلازمہ عطیہ کر دیا

پاکستان میں کورونا وائرس سے صحت یاب ہونے والے پہلےشخص نے اپنا پلازمہ عطیہ کردیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق یحیٰ جعفری اپنے والدین کے ہمراہ آیا، اس نے اللہ کا شکر ادا کیا اور اپنا پلازمیہ دینے کا فیصلہ، اس کا ماننا ہے کہ اگر وہ اس مشکل وقت میں دوسرے مریضوںکے کام آسکتا ہے تو وہ ایسا ضرور کرے گا۔
اس موقع پر موجود ڈاکٹر ثاقب انصار کا کہنا تھا کہ پلازمہ سے کورونا وائرس کی اینٹی باڈیز بنائی جائیں گی جس سے مریضوں کا علاج کیا جائے گا، ان کا مزید کہنا تھا کہ کورونا وائرس چلا جائے گا لیکن ہماری کوششیں ہمیشہ یاد رکھی جائیں گی۔ڈاکٹر طاہر شمسی کی جانب سے یہ ہدایت پیش کی گئی تھی جس میں بتایا گیا تھا کہ کورونا وائرس سے متاثرہ افراد کا علاج کسی صحت یاب مریض کے پلازما سے ممکن ہے۔

اس کے بعد پنجا ب اور سندھ حکومت نے اس طریقے سے علاج کرنے کی اجازت دےدی تھی۔ڈاکٹر طاہر شمسی نے اس بارے میں بات کرتے ہوئے بتایا تھا کہ اس عمل کے ذریعے ہم کورونا وائر س کی اینٹی باڈیز بنا سکتے ہیں۔ بعد میں اسے کسی بھی متاثرہ شخص کے جسم میں داخل کر کے اسے بھی صحت یا ب کیا جاسکتا ہے۔ پہلے سندھ حکومت کی جانب سے اس تجویز کو مسترد کر دیا گیا تھا لیکن بعد میں اجازت دی گئی تھی ۔
اس بارے میں کہا جا رہا تھا کہ شاید کوئی بھی صحت یاب ہونےو الا شخص اپنا پلازمہ دینے کی حمایت نہیں کرے گا، لیکن اب کراچی کے شہری یحیٰ جعفری نےخود ہسپتال آ کر اپنا پلازمہ دینے کا فیصلہ کیا ہے جس کے بعد وہ پاکستان کے پہلے شخص بن گئے ہیں جنہوں نے اپنا پلازمہ عطیہ کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔۔ یاد رہے کہ پاکستان میں اب تک کورونا وائرس کی وجہ سے 2300 کے قریب افراد متاثر ہو چکے ہیں جبکہ 30سے زیادہ افراد اس بیماری کا شکار ہو کر جاں بحق ہو گئے ہیں۔چین ابھی تک واحد ملک ہے جس نے کورونا وائرس پر قابو پایاہے، باقی ممالک میں یہ وبا ہر گزرتے دن کے ساتھ بڑھتی جا رہی ہے۔