متحدہ عرب امارات میں کورونا کے 483نئے کیسز سامنے آگئے،مزید 6مریض جاں بحق

متحدہ عرب امارات میں کورونا کے 483نئے کیسز سامنے آگئے،مزید 6مریض جاں بحق ہوگئے۔ تفصیلات کے مطابق متحدہ عرب امارات میں کورونا کے مزید 31ہزار 807ٹیسٹس کے بعد مملکت میں کورونا وائرس سے متاثرہ افراد کی مجموعی تعداد 8ہزار 238ہوگئی ہے جبکہ اب تک 52افراد جان کی بازی ہارچکے ہیں۔ اماراتی وزارتِ صحت کے مطابق مملکت میں مزید 103مریض صحتیاب ہوگئے ہیں اور ایسے صحتیاب ہونے والے مریضوں کی تعداد 1546ہوگئی ہے۔
وزارتِ صحت نے جاں بحق ہونے والے افراد کے ورثاء سے اظہارِہمدردی کیا ہے۔ وزارتِ صحت نے مریضوں کی جلد صحتیابی کیلئے نیک خواہشات کا اظہار کرتے ہوئے عوام سے اپیل کی کہ وہ مشکل کی اس گھڑی میں تعاون کریں۔ کورونا کے خلاف جنگ میں مزید آسانی پیدا کرنے اور وبا کے پھیلاؤ کو روکنے کیلئے انتظامیہ نے ابو ظہبی میں بس سروس کو غیرمعینہ مدت کیلئے معطل کردیا ہے۔

محکمہ ٹرانسپورٹ کی جانب سے بتایا گیا ہے کہ بس سروس کل سے غیرمعینہ مدت تک کیلئے بند رہے گی۔

البتہ طبی عملے کے لیے سواری فراہم کرنے والی سروس اپنا کام جاری رکھے گی۔ دوسری جانب ابوظہبی کے ایک ہسپتال میں زیر علاج کورونا کے مریض بچے نے بالآخر اس موذی مرض کو شکست دے کر مکمل صحت یابی حاصل کر لی۔ اماراتی میڈیا کے مطابق 9 سالہ بچے میں کورونا کی تشخیص ہوئی تھی، جس کے بعد اسے شیخ خلیفہ میڈیکل سٹی منتقل کیا گیا۔
بچے کی حالت بگڑ جانے پر اسے آئی سی یو منتقل کیا گیا تھا، کئی روز تک زیر علاج رہنے کے بعد بالآخر اس نے کوروناکے مرض سے شفا حاصل کر لی۔ آئی سی یومیں زیر علاج یہ بچہ امارات میں کورونا کا کم عمر ترین مریض تھا۔ ہسپتال کے عملے کو بھی اس سے ایک خاص اُنسیت اور ہمدردی ہو گئی تھی۔ بچے کے صحت یاب ہونے پر اس کے والدین سمیت ہسپتال کے عملے نے بھی خوب جشن منایا۔اس واقعے کی ایک ویڈیو بھی وائرل ہوئی ہے جس میں دیکھا جا سکتا ہے کہ اماراتی ہسپتال کا طبی عملہ کوریڈورمیں کھڑے ہو کرکورونا سے صحت یاب ہونے والے بچے کے لیے تالیاں بجا رہا ہے۔