کورونا وباء کی ڈیوٹی میں جاں بحق ہیلتھ ورکرز کے ورثاء کیلئے امدادی پیکج کا اعلان

وفاقی حکومت نے کووڈ19کی صورتحال میں جاں بحق ہیلتھ ورکرز ورثاء کیلئے پیکج کا اعلان کردیا، معاون خصوصی صحت ڈاکٹر ظفر مرزا نے کہا کہ کورونا مریضوں کی دیکھ بھال کے دوران جاں بحق ہیلتھ ورکر کو شہید کا درجہ دیا جائے گا،جاں بحق ہیلتھ ورکرز کو شہید کے برابر امدادی پیکج، اہلخانہ کو 30 لاکھ سے ایک کروڑ تک امدادی فنڈ، اور 100فیصد پنشن سمیت سرکاری گھر بھی برقرار رہے گا۔
انہوں نے میڈیا بریفنگ میں بتایا کہ وفاقی کابینہ میں ہیلتھ ورکز کی فلاح وبہبود کا جائزہ لیا گیا۔ کورونا وباء کی صورتحال میں فرنٹ لائن ورکرز کے تحفظ اور فلاح کیلئے حکومت مند ہے۔ انہوں نے کہا کہ کورونا مریضوں کی دیکھ بھال کے دوران جاں بحق ہیلتھ ورکر کو شہید کا درجہ دیا جائے گا۔

جاں بحق ہیلتھ ورکرز کو شہید کے برابر امدادی پیکج دیا جائے گا۔

شہید کے اہلخانہ کو 30 لاکھ سے ایک کروڑ تک امدادی فنڈ دیا جائے گا۔جاں بحق ہیلتھ ورکر کیلئے 100فیصد پنشن اور سرکاری گھر بھی برقرار رہے گا۔ شہداء پیکج اسلام آباد، گلگت بلتستان، اور آزاد کشمیرکے ہیلتھ ورکرز کیلئے ہے۔انہوں نے کہا کہ پاکستان میں کورونا کیسز کی تعداد 14 ہزار سے زائد ہوگئی ہے۔ گزشتہ 24 گھنٹے میں751 نئے کیسز رپورٹ ہوئے اور مزید20 اموات ہوئی ہیں۔
رپورٹ ہونے والے نئے کیسز کے ساتھ پنجاب میں 5 ہزار787، سندھ میں 5 ہزار291، خیبرپختونخواہ 1984، بلوچستان میں853 کیسز رپورٹ ہوئے۔ گلگت بلتستان 320، اسلام آباد 261، آزاد کشمیر میں 61 کیسز رپورٹ ہوئے ہیں۔ ملک بھر میں3233 مریض مکمل صحت یاب ہوکر گھروں کو چلے گئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ مساجد ایس اوپیز پر مکمل عملدرآمد نہیں کررہی ہیں۔ اگر کسیز بڑھے تو ہمیں لاک ڈاؤن سخت کرنا پڑے گا۔