سندھ میں بداحتیاطی سے کورونا گھروں میں گھس گیا، ترجمان سندھ حکومت

ترجمان سندھ حکومت مرتضیٰ وہاب نے کہا ہے کہ سندھ میں بداحتیاطی سے کورونا گھروں میں گھس گیا، سندھ میں 10سال سے کم عمر کے 253 معصوم بچے بھی کورونا کا شکار ہوچکے ہیں، ان بچوں میں ایک 10 ماہ کا بچہ بھی شامل ہے۔ انہوں نے اپنے بیان میں کہا کہ سندھ میں معصوم بچے بھی کورونا کا شکار ہورہے ہیں۔ 10سال سے کم عمر کے 253 بچے کورونا کا شکار ہوچکے ہیں۔
کورونا کے شکار 253 بچوں میں ایک 10 ماہ کا بچہ بھی شامل ہے، کورونا کے مجموعی کیسز کا 26 فیصد خواتین مریض ہیں۔انہوں نے کہا کہ یہ سارے اعدادوشمار بتانے کا مقصد یہ ہے کہ کورونا وائرس اب ہمارے گھروں میں گھس چکا ہے۔ کورونا کے گھروں میں گھسنے کی وجہ ہم احتیاط نہیں کررہے۔ دوسری جانب کراچی میں کورونا کیسز کی تعداد 5 ہزار سے تجاوز کر گئی ہے۔

گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران کراچی میں 376 مزید کیسز رپورٹ ہوئے ہیں۔

نئے کیسز کے ساتھ کراچی میں کورونا وائرس کیسز کی تعداد 5 ہزار سے تجاوز کر گئی ہے۔ سب سے زیادہ کیسز کراچی کے ضلع جنوبی میں رپورٹ ہوئے جہاں کورونا وائرس کے مزید 133 مریض سامنے آئے ہیں۔ جبکہ سندھ نے کورونا کیسز کی تعداد میں پنجاب کو بھی پیچھے چھوڑ دیا ہے۔ سندھ میں کورونا وائرس کے مریضوں کی تعداد 6 ہزار 675 جبکہ پنجاب میں کورونا وائرس سے متاثر ہونے والے افراد 6 ہزار 340 ہیں ، گلگت بلتستان 340، آزاد کشمیر میں تعداد 66 ہے۔ اسی طرح ملک میں 4 ہزار 715 افراد کورونا وائرس جیسے مہلک وائرس سے صحت یاب ہو گئے ہیں۔ خیبرپختونخوا میں 2 ہزار 799 جبکہ بلوچستان میں 1 ہزار 136 کسیز سامنے آ چکے ہیں ، اسلام آباد میں 365 افراد اس وائرس سے متاثر ہوئے ہیں۔