ای سی او ممالک کو مل کر Covid-19سے ہو نے والے معا شی نقصانا ت کا مقابلہ کرنا ہو گا ،ایف پی سی سی آئی

اقتصادی تعاون کی تنظیم چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹر ی کے ممبر ممالک کے ما بین 5مئی کو وڈیو لنک کے ذریعے ایک غیر معمولی اجلا س منعقد کیا گیا ۔ اس اجلاس میں کو وڈ 19- کے اقتصادی سر گر میوں اور ان کے نتیجے میں کیے جانے والے حکومتی اقدامات پر تبا دلہ خیال کیاگیا ۔ وبا ئی مر ض سے نمٹنے اور کا رباری سر گر میوں کو بحال کر نے کے لیے مو ثر اقداما ت زیر بحث لا ئے گئے جس میں برآمد ات میں اضا فہ اور چھو ٹے اور در میانے در جے کی صنعتو ں کی بقا ء پر بھی تبا دلہ خیال کیا گیا ۔
اس میٹنگ میں ECO-CCI کے ممبر ممالک کے سر براہا ن جس میں آذرکش حافظی، صدر ای سی او اور سی سی آئی ، Rifat Hisarcklolu ، صدر یو نین چیمبر اور کمو ڈٹی ایکسچینج تر کی ( TOBB)، Dovletgeldi Rejepov ، چیئر مین تر کمانستان سی سی آئی ، Syed Hossein Salimi ، بو رڈ ممبر آئی سی سی آئی ایم اے نے شر کت کی۔

ان کے علاوہ افغانستان ، کا زقستان ، کر غستان ، تا جکستان اور ازبکستان کے نما ئندوں نے بھی شر کت کی۔

علاوہ ازیں ڈاکٹر ہا دی سلیمان پور،سیکر یٹری جنرل ای سی او بھی اس میٹنگ میں شر یک ہو ئے ۔ پاکستان کی قیا دت امجد رفیع ، چیئر مین قومی کمیٹی برا ئے ای سی او سی سی آئی (Pakistan Chapter) اور ڈاکٹر اقبا ل تھہیم ، سیکر یٹر ی جنرل ایف پی سی سی آئی نے کی ۔ امجد رفیع نے اجلا س سے خطاب کرتے ہو ئے حکومت پاکستان کی طر ف سے کو رنا وائرس سے نمٹنے کے لیے کیے گئے اقدامات اور پاکستان کی تا جر بر ادری کی حمایت کے لیے ایف پی سی سی آئی کے کردار کو اجا گر کیا ۔
امجد رفیع نے کہاکہ حکومت پاکستان کے حالات کو دیکھتے ہو ئے لا ک ڈائون ، صحت اور قر نطینہ کی سہو لیا ت کو بہتر بنا نے کے حوالے سے فوری اقدامات کیے ۔سما جی اور معا شی نقصانات کو کم کرنے کے لیے حکومت پاکستان نے متعد د اقدامات کیے ہیں جس میں Rs. 1.2 trillionمعا شی ریلیف پیکیج ، احساس /کفا لت پروگرام، مر کزی بینک کی طر ف سے جا ری کر دی متعدد کم شر ح سود پر قر ضو ں کی فرا ہمی سے متعلق اسکیمز ، تعمیراتی صنعت کیلیے ایمنسٹی اسکیم، ادائیگیو ں کو موخر کر نے اور ٹیکس گو شوارے جمع کروانے میں تو سیع کے معاملے میں مالی ریلیف ، بند گاہ سے متعلق مختلف چا ر جز میں کمی ، مختلف صو با ئی levies میں چھوٹ وغیرہ شا مل ہیں ۔
انہو ں نے اس وائر س کی روک تھام اور کا رباری سر گر میوں کو فر وغ دینے کے لے ای سی او سی سی آئی کے ممبر ممالک کی اجتما عی کو ششو ں پر بھی زور دیا ۔ ای سی اور سی سی آئی ممبرز تجا رت کے فروغ کے لیے مو ثر ای کامر س تشکیل دے اور رکن ممالک میں دستیا ب وسائل کی نشاندہی کر نے کے لیے ایک لا ئحہ عمل تیار کر ے۔ علاوہ ازیں رکن ممالک آپس میں ضرورت کے تحت طبی مہارت ،دستیاب طبی سامان ، دوائیں ، ٹیسٹ کٹ اور لبا س وغیر ہ بھی شیئر کر یں ۔
انہو ں نے مزید کہاکہ یہ پو ری دنیا کے لیے سنجیدہ وقت ہے اور ای سی او سی سی آئی فیملی کو مل کر اس کا مقابلہ کرنا چا ہیے ۔ انہو ں نے حکومت پاکستان کی جانب سے تا جر برا دری کی حما یت میں کی جا نے والی انتھک محنت کو سراہا ۔ اس کے علاوہ انہو ں نے ای سی او سیکر یٹر یٹ کا شکر یہ ادا کیا جس نے ان حالا ت کے دوران اہم مو ضو ع پر اجلاس منعقد کیا۔ Rifat Hisarciklioglu ، صدر ToBB نے اپنے استقبا لیہ کلما ت میں کہا کہ دنیا اب virtually طور پر منسلک ہو چکا ہے جو کہ ایک نیا عالمی نظام ہے ۔
COVID-19 کا عالمی سطح پر ایک علا ج ہے جو کہ تنہا ئی اور معا شرتی دوری ہے ، عالمی معیشت بر ی طر ح متا ثر اور سست روی کا شکا ر ہے ، تیل کی قیمتیں بھی معا شی نمو پر بر ی طر ح اثر انداز ہو رہی ہے ۔ اس کے علاوہ انہو ںنے مزید کہاکہ ہما را خطہ ECOبھی کم مر بوط ہے ۔ انہو نے مزید کہاکہ کر ونا وائرس کا پہلا کیس ما ر چ 2020میں رپورٹ ہو تھا اس وقت حکومت احتیاطی اقدامات کر رہی ہے اور لا ک ڈائون کیا ہو ا ہے ۔
حکومت نے اس کے علاوہ مختلف ریلیف کے اقدامات با لخصو ص بز نس کمیو نٹی کے لیے بھی کیے ہیں اور ٹیکس کی ادائیگیو ں کو تین مہینے کے لیے مو خر کر دیا ہے ۔ ECOچیمبر کے صدر آذر حشی حافظی نے کہاکہ اس وباء سے ہما را خطہ بو ری طرح متا ثر ہو ا ہے وباء کے احتتام تک بہت سے معاشی اور دوسرے نقصانات ہو چکے ہو نگے تمام ممبر ممالک کو چا ہیے کہ وہ ایک دوسرے کے ساتھ معاشی تر قی کے لے تعاون کریں اور اشیا خور نوش کی فراہمی کو یقینی بنا ئے ، با ہمی تعاون اس سلسلے میں بہت ضروری ہے ۔
انہو ں نے کہاکہ افغانستا ن بحثیت تر قی پذیر ملک اس وباء سے معاشی طور پر بہت متا ثر ہو ا ہے ۔ ECOسیکر یٹر ی جنرل ہا دی سولیمان پور نے خطہ کو در پیش مستقبل کے چیلنجزپر زور دیا ۔ انہو ں نے کہاکہ ECOکے ایجنڈے پر بہت سے پروگرام ہے جن میں ویزا اسٹیکر ، اشیاء کی ترسیل ، ٹر ک ڈرائیور کی اسٹیکرز، اشیا ء کی آمدورفت، ECOTAاہم ہے ۔ انہو ں نے ECO بینک پر زور دیا کہ وہ کرونا وائرس کے دوران ایس ایم ایز کی معاونت کرے ۔
اور مزید بتا یا کہ ECOسیکریٹر ایٹ مختلف بین الا قوامی ڈونر ایجنسیزکے ساتھ بھی liaisoningکر رہا ہے ۔ ECO چیمبر کے ممبران ممالک کے نما ئندوں نے بھی کرونا وائرس سے پیدا ہو نے والی صورتحال اور حکومتی اقدامات سے متعلق اپنے ممالک کے بارے میں آگا ہ کیا جس میں ما لیا تی مسا ئل ، ٹیکسز اور بیروزگاری اہم ہیں ۔ اجلا س میں ECO چیمبر کی کمیٹی میٹنگ کو بذریعہ وڈیولنک بلا نے پر بھی غور کیا گیا ۔ امجد رفیع چیئر مین نیشنل کمیٹی ECO چیمبر (پاکستان) ڈاکٹر اقبال تھہیم ، سیکر یٹر ی جنرل ایف پی سی سی آئی ، امجد قریشی اور احمد زمان خان ، ایڈ یشنل سیکر یٹر ی جنرل نے ECO اجلا س میں شر کت کی ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں