ہندو شدت پسند مودی سرکار نے مقبوضہ کشمیر میں عید کی نماز پر پابندی عائد کر دی

ہندو شدت پسند مودی سرکار نے مقبوضہ کشمیر میں عید کی نماز پر پابندی عائد کر دی، کرونا وائرس پھیلاو کے باوجود بھارت میں ہندووں کی مذہبی رسومات پر کوئی خاص پابندیاں عائد نہ کی گئیں، جبکہ مہلک وبا کو بہانہ بنا کر مقبوضہ کشمیر کے مسلمانوں کو عید کی نماز کی ادائیگی سے محروم کر دیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق بھارت میں ہندو شدت پسند مودی سرکار نے اب کھل کر مسلمانوں کیخلاف جارحانہ اقدامات اٹھانا شروع کر دیے ہیں۔

بتایا گیا ہے کہ تقریباً ایک سال سے لاک ڈاون کی حالت میں موجود مقبوضہ کشمیر کے مسلمانوں کو اب عید کی نماز کی ادائیگی سے بھی محروم کر دیا گیا ہے۔ نریندر مودی سرکار نے کرونا وائرس وبا کو بہانہ بنا کر مقبوضہ کشمیر کے مسلمانوں کیلئے عید کی نماز کے اجتماعات کے انعقاد پر پابندی عائد کر دی ہے۔ جبکہ خود نریندر مودی کرونا وائرس پھیلاو کے باوجود 5 اگست کو بابر مسجد کی جگہ مندر کی تعمیر کا سنگ بنیاد رکھے گا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں