نیب کا نواز شریف اور آصف زرداری کی گاڑیاں قبضے میں لینےکا فیصلہ

نیب نے سابق وزیراعظم نواز شریف اور سابق صدر آصف زرداری کی گاڑیاں قبضے میں لینے کا فیصلہ کرلیا، نوازشریف اور آصف زرداری کو یہ گاڑیاں توشہ خانہ سے تحفے میں ملی تھیں، آصف زرداری کی 3 اور نوازشریف کی ایک گاڑی کی ملکیت منجمد کردی ہے۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق نیب نے نوازشریف اور آصف زرداری پر توشہ خانہ سے تحفے میں ملنے والی گاڑیوں کی الزام میں کرپشن ریفرنس دائر کردیا ہے۔
نیب نے احتساب عدالت میں جمع رپورٹ کہا کہ توشہ خانہ سے تحفے میں ملنے والی سابق صدر آصف زرداری کی 3 گاڑیوں کی جبکہ سابق وزیراعظم میاں نوازشریف کی ایک گاڑی کی ملکیت منجمد کردی ہے۔احتساب عدالت نے نیب سے تفتیشی افسر کو تمام گاڑیوں کا ریکارڈ 5 اگست کو پیش کرنے کا حکم دیا ہے۔
مزید برآں توشہ خانہ ریفرنس میں نواز شریف کی طلبی کا اشتہار چسپاں کر دیا گیا ،نواز شریف کی طلبی کا اشتہار رائیونڈ رہائشگاہ پر چسپاں کردیا گیا ۔

احتساب عدالت نے کہا کہ نواز شریف جان بوجھ کر عدالتی کارروائی سے مفرور ہیں، نواز شریف کو اشتہاری قرار دینے کی کاروائی شروع کردی، نواز شریف کو پیش ہوکر توشہ خانہ ریفرنس کا جواب دینے کے لیے 17 اگست تک آخری موقع دیا ہے۔ دوسری جانب سابق صدر آصف علی زرداری کی جانب سے فاروق ایچ نائیک اور اسد عباسی ایڈووکیٹ پیش ہوئے ۔ سابق صدر نے استدعا کی کہ فردجرم روکیں، ریفرنس خارج کرکے بری کریں۔ احتساب عدالت نے آصف زرداری کی درخواست پر نیب کو نوٹس جاری کردیا۔ احتساب عدالت نے آصف علی زرداری پر فردجرم کے لیے ویڈیو لنک انتظام کا حکم دے رکھا ہے۔ عدالت نے 4 اگست کو آصف علی زرداری سمیت 14 ملزمان پر فرد جرم عائد کرنے کے لئے تاریخ مقرر کی ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں