لوگ باہرنکلے توحکومت کوگھرجانا پڑے گا. آصف زرداری

سابق صدر پاکستان آصف علی زرداری نے کہا ہے کہ لوگ باہرنکلے توحکومت کوگھرجانا پڑے گا انہوں نے پاکستان مسلم لیگ (ن) کے مرکزی صدر میاں شہباز شریف کی گرفتاری کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ شہباز شریف اندر گئے ہیں، کل ہم سب نے اندر جانا ہے انہوں نے کہا کہ ایک دن یہ سب ہونا ہے.
سابق صدرآصف علی زرداری نے دعویٰ کیا ہے کہ عوام نکلی تو عمران خان کو کسی کی سپورٹ کام نہیں آئے گی‘ سابق صدر نے کہا کہ ملک میں معیشت کی صورتحال سب کے سامنے ہے اور عالمی سطح پر کیا پیغام جا رہا ہے وہ بھی سب کے سامنے ہے.
قبل ازیں آج احتساب عدالت نے سابق صدر پاکستان آصف علی زرداری اور فریال تالپور سمیت دیگر ملزمان پر میگا منی لانڈرنگ ریفرنس میں فرد جرم عائد کر دی ہے‘سابق صدرپاکستان آصف علی زرداری ، ان کی ہمشیرہ فریال تالپور اورملزم عبدالغنی مجید نے عدالت کے سامنے صحت جرم سے انکار کر دیا ہے.

آصف علی زرداری اور فریال تالپور ذاتی حیثیت میں عدالت میں پیش ہوئے جب کہ ملزم عبد الغنی مجید پر ویڈیو لنک کے ذریعے فرد جرم عائد کی گئی ملزمان کی جانب سے صحت جرم سے انکار کے بعد عدالت نے منی لانڈرنگ ریفرنس پر مزید سماعت 13 اکتوبر تک ملتوی کر دی ہے. عدالت نے آئندہ سماعت پر احتساب عدالت نے گواہان احسن اسلم، محمد عاطف اور منظور حسین کو پیش ہونے کا حکم دیا ہے جبکہ پارک لین اور ٹھٹھہ واٹر سپلائی ریفرنس میں فرد جرم عائد کرنے کی کارروائی 5 اکتوبر تک ملتوی کر دی گئی ہے.
واضح رہے کہ پچھلے ہفتے میں احتساب عدالت نے سابق صدرآصف علی زرداری کی نیب ریفرنسز کیخلاف تین درخواستیں خارج کر دی تھیںاحتساب عدالت کے جج اعظم خان نے فیصلہ سناتے ہوئے کہا تھا کہ سابق صدر آصف علی زرداری کو نیب ریفرنسز میں بری نہیں کیا جا سکتا عدالت نے آصف زرداری پر تینوں کرپشن ریفرنسز میں فرد جرم عائد کرنے کا حکم بھی دیتے ہوئے آصف زرداری سمیت تمام ملزمان کو آج 28 ستمبر کو پیش ہونے کا حکم دیا تھا.
سابق صدر آصف علی زرداری نے نیب کی جانب سے دائر ٹھٹھہ واٹرسپلائی، پارک لین اور میگا منی لانڈرنگ ریفرنسز کیخلاف درخواست دائر کی تھی ٹھٹھہ واٹرسپلائی ریفرنس میں نوڈیرو ہاﺅس کے انچارج ندیم بھٹو کو گرفتار کیا گیا تھا ندیم بھٹو سے تفتیش کے بعد آصف زرداری کو ملزم نامزد کیا گیا تھا ریفرنس میں بتایا گیا ہے کہ ٹھٹھہ واٹرسپلائی کےغیرقانونی ٹھیکے دیئے گئے، ٹھیکوں کے نتیجے میں رقم جعلی اکاﺅنٹس کے ذریعے ندیم بھٹوکے اکاﺅنٹس میں آتی رہی اور ندیم بھٹو اس رقم سے نوڈیرو ہاﺅس کا انتظام چلاتے رہے.
پارک لین کمپنی ریفرنس میں17 میں سے آصف زرداری مجموعی طور پر 13 ملزمان پر فرد جرم عائد کی گئی جن میں 10 افراد اور تین کمپنیاں شامل ہیں ریفرنس میں نامزد3 ملزمان یونس قدوائی، عزیر نعیم اور اقبال میمن اشتہاری ہیں. پارک لین ریفرنس میں آصف علی زرداری پر جعلی بینک اکاﺅنٹس کے ذریعے قومی خزانے کو 3 ارب 77 کروڑ روپے نقصان پہنچانے کا الزام ہے ریفرنس میں پیپلز پارٹی کے سینیٹر عثمان سیف اللہ، انور سیف اللہ اور سلیم سیف اللہ سمیت دیگر ملزمان بھی نامزد ہیں.
آصف زرداری پر پارک لین کمپنی اور اس کے ذریعے اسلام آباد میں 2 ہزار 460 کنال اراضی خریدنے کا بھی الزام ہے جب کہ اس کیس میں بلاول بھٹو زردای بھی نامزد ہیں نیب کا موقف ہے کہ آصف علی زرداری قرض لے کر معاف کرانے کے اس مقدمے میں بطور صدر اثرانداز ہوئے، انہوں نے نیشنل بینک سے اپنی جعلی کمپنی کو قرض دلوایا، کیس میں نیشنل بینک کے سابق صدور سمیت مختلف گواہان اپنے بیانات ریکارڈ کرا چکے ہیں. میگا منی لانڈرنگ کیس میں پاکستان پیپلز پارٹی کے شریک چیئرمین آصف علی زرداری اور ان کی بہن فریال تالپور کے علاوہ دیگر افراد پر جعلی بینک اکاﺅنٹس کے ذریعے اربوں روپے بیرون ملک منتقل کرنے کا الزام ہے.

اپنا تبصرہ بھیجیں