صنعتوں کو ہر ممکنہ سہولت فراہم کرنا حکومت کی اولین ترجیح ہے ، وزیراعظم

وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ صنعتوں کو ہر ممکنہ سہولت فراہم کرنا حکومت کی اولین ترجیح ہے، اس سے معاشی عمل میں تیزی آئے گی ۔ تفصیلات کے مطابق وزیراعظم عمران خان سے گورنر سندھ عمران اسماعیل اور معروف بزنس مین عقیل کریم ڈھیڈی نے ملاقات کی ، جس دوران وزیراعظم نے کہا کہ پاکستان میں صنعتوں کو ہر ممکنہ سہولت فراہم کرنا ہماری حکومت کی اولین ترجیح ہے ، اس کی وجہ سے معاشی عمل میں تیزی آئے گی ، جب کہ اس سے نوجوانوں کیلئے نوکریوں کے مواقع اور دولت کی پیداوار کو یقینی بنانے میں مدد ملے گی۔
اس موقع پر عقیل کریم ڈھیڈی نے صنعتوں کے فروغ سے متعلق وزیراعظم کی ذاتی دلچسپی پر شکریہ ادا کیا اور کہا کہ حکومتی کوششوں اور پالیسیوں کے نتیجے میں کاروباری برادری کا اعتماد بحال ہوا۔
قبل ازیں وزیراعظم عمران خان کی زیرصدارت وفاقی کابینہ کا اجلاس ہوا جس کے زیرو آور میں نواز شریف کو وطن واپس لانے پر بات چیت ہوئی اور مختلف پہلوں پر غور کیا گیا، ذرائع کے مطابق وفاقی حکومت نے برطانوی حکومت کوخط لکھنے کا فیصلہ کیا ، وزیراعظم عمران خان نے ہدایت کی کہ نواز شریف کو وطن واپس لانے کیلئے اقدامات کئے جائیں ،وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ احتساب کا عمل بلاتفریق جاری رہے گا، اپوزیشن کو احساس ہوچکا ہے کہ این آر او نہیں ملے گا ، اپوزیشن جماعتیں اپنے کیسز سے توجہ ہٹانے کیلئے اداروں کو متنازع بنا رہی ہیں، لیکن حکومت اپوزیشن کی بلیک میلنگ میں نہیں آئے گی۔

وزیراعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ نواز شریف کی واپسی کے لیے خود برطانیہ جانا پڑا تو جاؤں گا ، تفصیلات کے مطابق حکومت نواز شریف کو واپس لانے کے لیے خاصی متحرک دکھائی دے رہی ہے جب کہ وزیراعظم کی بھی پوری کوشش ہے کہ ہر صورت میں نواز شریف کو وطن واپس لایا جائے ،خاص طور پر نواز شریف کی حالیہ تقاریر کے بعد حکومت انہیں واپس لانے کے لیے سر توڑ کوششیں کر رہی ہے ، پاکستان نے برطانیہ سے نواز شریف کو پاکستان بھیجنے کا مطالبہ کیا ہے ، اس حوالے سے وزیراعظم عمران خان نے نجی ٹی وی چینل کو انٹرویو دیتے ہوئے بڑا اعلان کیا ہے ، وزیراعظم کا کہنا ہے کہ نواز شریف کی واپسی کے لیے برطانیہ بھی جانا پڑا تو جاؤں گا ، ضرورت پڑی تو برطانوی وزیراعظم بورسن جانس سے بات کروں گا۔