تیسرا ٹی ٹونٹی، پاکستان نے زمبابوے کیخلاف کلین سویپ مکمل کرلیا

تین ٹی ٹونٹی میچز کی سیریز کے آخری مقابلے میں پاکستان نے زمبابوے کو 8 وکٹوں سے ہرا کر کلین سویپ مکمل کرلیا۔ زمبابوے نے اننگز کا آغاز کیا تو چمو چبھابھا اور برینڈن ٹیلر نے ٹیم کو گزشتہ میچوں کی نسبت زیادہ اچھا آغاز فراہم کیا ۔ مہمان ٹیم کا سکور 26 تک پہنچا تو عماد وسیم نے برینڈن ٹیلر کی قیمتی وکٹ حاصل کر کے پاکستان کو پہلی کامیابی دلا دی۔
پاکستان کو اگلی وکٹ بھی جلد ہی مل گئی اور کریگ ارون صرف 4 رنز بناکر حارث رؤف کو وکٹ دے بیٹھے ، اسی اوور میں ریان برل بھی ایک رن بنا کر چلتے بنے، چمو چبھابھا نے اچھی فارم دکھاتے ہوئے 31 رنز سکور کیے لیکن عثمان قادر نے انہپں پوویلین چلتا کیا ، اپنے اگلے اوور میں عثمان قادر نے لگاتار دوسرے میچ میں عمدہ باؤلنگ کرتے ہوئے ایک ہی اوور میں ملٹن شمبا کوسٹمپ آئوٹ کروانے کے بعد ویزلے مدھویرے کی اننگز کا بھی خاتمہ کیا ، سکور 87 تک پہنچا تو انہوں نے اپنے کوٹے کی آخری گیند پر اپنا آخری انٹرنیشنل میچ کھیلنے والے ایلٹن چگمبھرا کی وکٹ لیکر چوتھی کامیابی حاصل کرلی ۔
ڈونلڈ ٹریپانو اور مساکاڈزا نے زمبابوے کا سکور 120 رنز تک پہنچایا، اس موقع پر حسنین نے مساکاڈزا کو 11رنز پر آئوٹ کیا ۔ زمبابوے نے مقررہ اوورز میں 9 وکٹوں پر 129 رنز بنائے۔ پاکستان کی جانب سے عثمان قادر نے سب سے زیادہ 4 اور عماد وسیم نے 2 وکٹیں حاصل کیں۔ پاکستان نے ہدف کا تعاقب شروع کیا تو فخر زمان اور اپنا پہلا بین الاقوامی ٹی ٹونٹی کھیلنے والے عبداللہ شفیق نے 39 رنز کا آغاز فراہم کیا، فخر زمان 21 رنز بنا کر مساکاڈزا کی وکٹ بن گئے۔
اس سے قبل سیریز کے تیسرے اور آخری ٹی ٹونٹی میچ میں زمبابوے کے کپتان چمو چبھابھا نے ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کا فیصلہ کیا۔ پاکستان نے میچ کے لیے ٹیم میں ٹیم میں دو تبدیلیاں کی ہیں، نوجوان بلے باز عبداللہ شفیق نے ڈیبیو کیا جبکہ عماد وسیم کو بھی ٹیم میں شامل کیا گیا ہے ۔ واضح رہے کہ پاکستانی ٹیم ابتدائی دونوں ٹی ٹونٹی میچز جیت کر سیریز پہلے ہی اپنے نام کر چکی ہے۔ میچ کے لیے پاکستانی ٹیم میں بابراعظم (کپتان)، فخر زمان، عبداللہ شفیق، حیدر علی، محمد رضوان، خوشدل شاہ، فہیم اشرف، عثمان قادر، عماد وسیم، محمد حسنین اور حارث رؤف شامل ہیں۔