پی پی رہنما بابر بٹ کے قتل کا مقدمہ تھانہ مناواں میں درج

مقدمہ میں عاطف ، عرفان جٹ اور ایم این اے شوکت سہیل بٹ کو نامزد کیا گیا ہے ، بلاول بھٹو زرداری کی جانب سے شدید مذمت

لاہور ( ٹیسکو نیوز ) پیپلز پارٹی کے رہنما بابر بٹ کے قتل کا لاہور کے تھانہ مناواں میں مقدمہ درج کرلیا گیا ، ملزمان عاطف ، عرفان جٹ سمیت لیگی ایم این اے شوکت سہیل بٹ کو نامزد کر دیاگیا ۔ بلاول بھٹو کہتے ہیں کہ نواز حکومت نے اپنے کارندے پیپلز پارٹی کے کارکنوں پر دہشتگری کے لیے چھوڑ رکھے ہیں ۔ پیپلز پارٹی کے رہنما بابر بٹ کا بارہ مارچ کی شب لکھو ڈہر میں قتل ، چھوٹے بھائی قیصر سہیل بٹ کی درخواست پر قتل کا مقدمہ درج ، ایف آئی آر میں ملزمان عاطف عرف عاطی اور عرفان جٹ نامزد ،
لیگی ایم این اے سہیل شوکت بٹ کو بھی مقدمے میں نامزد کر دیا گیا ۔ ایف آئی آر کے مطابق رات ساڑھے گیارہ بجے ملزمان نے ڈرائینگ روم میں داخل ہوکر فائرنگ کی ۔ ملزمان نے کلاشنکوف سے فائرنگ کرکے بابر بٹ کو زخمی کیا ۔ بابر بٹ زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے سروسز ہسپتال میں دم توڑ گیا ۔ بلاول بھٹو زرداری کی طرف سے پارٹی رہنما بابر سہیل بٹ کے قتل کی شدید مذمت ، بلاول بھٹو کہتے ہیں کہ نواز حکومت نے اپنے کارندے پیپلز پارٹی کے کارکنوں پر دہشتگردی کے لئے چھوڑ رکھے ہیں ۔ بلاول بھٹو کا کہنا ہے کہ شہید بابر بٹ کا قتل اور شوکت بسرا پر حملہ ایک ہی سازش کا حصہ ہے ۔ ان کا کہنا تھا کہ پیپلز پارٹی کے کارکنوں نے برداشت کا مظاہرہ چھوڑ دیا تو نواز حکومت کو بھاگنا پڑیگا ۔ پولیس نے مقدمہ درج کرکے جائے وقوعہ سے شواہد اکٹھے کرنے کے بعد واقعہ کی تحقیقات شروع کر دی ہیں اور ملزمان کی گرفتاری کے لئے چھاپے مارے جا رہے ہیں ۔