ایم کیو ایم بانی کیس کا فیصلہ قانون کے مطابق کیا جائے گا: برطانیہ

اسلام آباد: ( ٹیسکو نیوز) برطانوی سیکرٹری داخلہ امبر رڈ نے اسلام آباد میں پاکستانی ہم منصب چودھری نثار علی خان سے ملاقات کی جس میں دو طرفہ تعلقات، سلامتی، انسداد دہشتگردی اور امیگریشن سے متعلق امور پر تبادلہ خیالات کیا گیا۔ بعد ازاں مشترکہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے برطانوی سیکرٹری داخلہ کا کہنا تھا کہ پاکستان کے تحفظات سے بخوبی آگاہ ہیں۔ برطانیہ میں کوئی بھی قانون سے بالاتر نہیں، ایم کیو ایم بانی کیس کا فیصلہ قانون کے مطابق کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان دہشتگردی سے سب سے زیادہ متاثر ہوا۔ گزشتہ 2 برسوں میں پاکستان میں سیکیورٹی کی صورتحال اچھی ہوئی اور پاکستانی معیشت بھی مسلسل بہتر ہو رہی ہے۔ تاہم دہشتگردی کے خاتمے کے لیے ابھی بہت کچھ کرنا باقی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ چودھری نثار کے ساتھ تعمیری بات چیت ہوئی۔ دونوں ملکوں کے پاس مشترکہ مواقع موجود ہیں۔ پاکستانی عوام اور تارکین وطن سے قریبی روابط ہیں۔ پاکستان کے ساتھ شراکت داری جاری رکھنا چاہتے ہیں۔ برطانوی سیکرٹری داخلہ نے 23 مارچ کے موقع پر پاکستانی عوام کو مبارکباد بھی دی۔

اس موقع پر پریس کانفرنس کرتے ہوئے وفاقی وزیر داخلہ چودھری نثار علی خان کا کہنا تھا کہ پاکستان اور برطانیہ کے تعلقات طویل تاریخ پر محیط ہیں۔ برطانوی ہم منصب کے ساتھ ملاقات انتہائی مفید اور خوشگوار ماحول میں ہوئی جس میں دونوں ملکوں نے ایک دوسرے کے نقطہ نظر کو سمجھا۔ توقع ہے کہ برطانوی حکام آئندہ بھی پاکستان کا دورہ کرتے رہیں گے۔ چودھری نثار نے بتایا کہ دونوں ملکوں نے مسائل کے حل پر اتفاق کیا ہے۔ ملاقات میں دونوں ملکوں کے درمیان اطلاعات کے تبادلے کے حوالے سے بھی بات ہوئی ہے جبکہ سیکیورٹی، انسداد دہشتگردی، منشیات، امیگریشن پر بات چیت جاری رکھنے پر اتفاق اور دستاویزات کے بغیر برطانیہ میں مقیم پاکستانیوں کے حوالے سے بھی معاہدہ ہوا۔ چودھری نثار نے کہا کہ پاکستان چاہتا ہے کہ دونوں ملکوں کے درمیان مسائل سفارتی اور قانونی طریقے سے حل کئے جائیں