اسامہ کو سابق ڈائریکٹر سی آئی اے اور ترکی الفیصل خطے میں لائے: خواجہ آصف

اسلام آباد ( جیوعوام ) وفاقی وزیر دفاع خواجہ آصف کا بڑا انکشاف، کہتے ہیں اسامہ بن لادن کو سی آئی اے کا ڈائریکٹر ویلم لیکس اور سعودی ذمہ دار ترکی بن فیصل لائے۔ وفاقی وزیر دفاع خواجہ آصف نے کہا ہے کہ پیپلز پارٹی اپنا ملبہ اٹھائے، حقائق کو نہ چھپائے، اسامہ بن لادن کو سی آئی اے کا ڈائریکٹر ویلم لیکس اور سعودی ذمہ دار ترکی بن فیصل خطے میں لائے۔ خواجہ آصف کا کہنا ہے کہ اس وقت اسامہ بن لادن ان کا ہیرو تھا، بعد میں دہشت گرد قرار دیا گیا، الٹا پیپلز پارٹی والے کہہ رہے ہیں کہ اسامہ بن لادن کو یہاں کون لایا تھا؟ انہوں نے یہ بھی کہا کہ پیپلز پارٹی ماضی میں امریکہ کیلئے جو کچھ کرتی رہی وہ سب پر واضح ہے۔خواجہ آصٖف نے استفسار کیا کہ پی پی پی والے دنیا کو پاکستان کی ایسی تصویر دکھا کر کس کی خدمت کرنا چاہتے ہیں، ہم اپنی سکیورٹی اور مفادات پر کوئی کمپرومائز نہیں کر سکتے۔ انہوں نے واضح کیا کہ ہم پر کسی کا دباؤ نہیں چل سکتا۔ وزیر دفاع نے مزید کہا کہ الزام تراشی سے ہمیں کوئی فرق نہیں پڑتا، ہم ضرور پوچھیں گے کہ مشکوک سرگرمیوں کے حامل پراسرار سینکڑوں افراد کو ویزے کیونکر جاری ہوئے؟ خواجہ آصف نے دعویٰ کیا کہ ملکی سکیورٹی اداروں اور انٹیلی جنس کو بائی پاس کیا گیا مگر یہ پراسرار عمل ان کا پیچھا نہیں چھوڑے گا۔انہوں نے مزید کہا کہ پیپلز پارٹی کی قیادت یہ بتائے کہ مشکوک لوگوں کی یہاں آمد کے مقاصد کیا تھے؟ کن اختیارات کے تحت انہیں ویزے جاری کئے گئے؟ انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم کا ایسا کوئی اختیار نہیں ہوتا، نہ ہی ایسی کوئی اتھارٹی ان کے پاس تھی