عزیر بلوچ کے را سے رابطوں کی تحقیقات، کیس ملٹری کورٹ بھیجا جانے کا امکان

کراچی: (99 نیوز) کراچی میں گینگ وار کا سرغنہ عزیر بلوچ را کا ایجنٹ نکلا، ایرانی خفیہ ایجنسی سے بھی رابطے میں تھا، کیس ملٹری کورٹ میں چلائے جانے کا امکان ہے۔

لیاری گینگ وار کا گرفتار سرغنہ عزیر بلوچ بھی بدنام زمانہ بھارتی خفیہ ایجنسی را کا ایجنٹ نکلا۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ کالعدم امن کمیٹی کا سابق سربراہ را سے رابطے میں تھا، جس کی تحقیقات جاری ہیں۔ گینگ وار کے سرغنہ کے خلاف مقدمہ فوجی عدالت میں بھیجے جانے کا امکان ہے۔ معلوم ہوا ہے کہ عزیر بلوچ ایرانی خفیہ ایجنسی سے بھی رابطے میں رہا۔ گینگ وار کے سرغنہ نے ایران کے خفیہ دورے بھی کئے۔ ادھر انسداد دہشتگردی عدالت نے لیاری آپریشن کے دوران پولیس افسروں و اہلکاروں سمیت پچیس افراد کے قتل کیس میں ملوث عزیر بلوچ و دیگر پر ترمیمی فرد جرم عائد کر دی ہے۔ ملزموں نے صحت جرم سے انکار کر دیا ہے۔ ملزموں میں امین بلیدی، مشتاق خان، عبد الغفار عرف ماما اور رمضان عرف رمضانی شامل ہیں۔