ایک تصویر ایک کہانی….

لاہور ( ٹیسکو نیوز) گوالمنڈی کا رہائشی احمد علی ایک کالج کے باہر برف کے گولے فروخت کرتا ہے۔ اس کا کہنا ہے کہ بچپن سے غریبی دیکھی والد محنت مزدوری کرتا ہے۔ ہم تین بہن بھائی ہیں گزر بسر مشکل سے ہو رہا تھا لہٰذا تعلیم حاصل نہ کر سکا سردیوں میں اپنے باپ کے ساتھ مزدوری کرتا ہوں اور گرمیوں میں برف کے گولے فروخت کرتا ہوں۔ یومیہ 2سے 3سو تک گولے فروخت ہو جاتے ہیں والد بھی مزدوری کرتے ہیں سو گزارا چل رہا ہے۔ مہنگائی کے اس دور میں گھر کے جتنے افراد ہوں مزدوری کریں تب گزر اوقات ہوتا ہے اگر مجھے کوئی سرکاری نوکری مل جائے تو میں صبح نوکری کر کے شام کو مزدوری کر لوں تاکہ میں اپنے والدین کا سہارا بنوں۔