شام پر نئی پابندیوں کی امریکی منصوبہ بندی کا اعلان

امریکا (جیوعوام) امریکا میں شام میں اسد حکومت پر نئی اقتصادی پابندیاں عاید کرنے کا اعلان کیا ہے۔ امریکی وزیرخزانہ اسٹیف منوچین نے ایک بیان میں کہا ہے کہ حکومت جلد ہی اسد حکومت پر نئی اقتصادی پابندیوں کا اعلان کرے گی۔غیر ملکی میڈیا کے مطابق گزشتہ روز فلوریڈا میں ایک نیوز کانفرنس کے دوران وزیر خزانہ نے بتایا کہ حکومت شام میں نہتے شہریوں کے خلاف مہلک کیمیائی گیس کے استعمال کے جواب میں اسد حکومت کے خلاف اقتصادی پابندیوں کی ایک نئی فہرست تیار کررہی ہے۔منوچین نے بتایا کہ مجموزہ پابندیاں انتہائی موثر ہوں گی اور کسی بھی شخص اسد رجیم کے ساتھ تجارتی روابط اور لین دین سے روک دیں گی۔خیال رہے کہ امریکی حکومت نے شام میں صدر بشار الاسد پر نئی اقتصادی پابندیاں ایک ایسے وقت میں عاید کرنے کی تیاری شروع کی ہے جب گذشتہ روز امریکی فوج نے شام میں ایک سرکاری فوجی اڈے پر 59کروز میزائل حملے کیے ہیں جس کے نتیجے میں فوجی اڈے کو تباہ کر دیا گیا ہے۔امریکی وزارت دفاع کے ترجمان کا کہنا ہے کہ ٹوماہاک طرز کے 59میزائلوں سے الشعیرات کے فوجی اڈے پر موجود جنگی جہازوں، لاجسٹک سپورٹ سنٹر، ایندھن کے مراکز، فضائی راڈار سسٹم اور اسلحہ کے ذخائر کو تباہ کیا گیا ہے۔امریکا نے یہ حملہ چار اپریل کو ادلب میں خان الشیخون کے مقام پر مبینہ کیمیائی حملے کے رد عمل میں کیا ہے۔ مشتبہ کیمیائی حملے میں خواتین اور بچوں سمیت سو کے قریب شہری جاں بحق اور سیکڑوں زخمی ہوگئے تھے۔