الطاف نے بہت نقصان پہنچایا، کسی ملک کو کارروائی میں رکاوٹ نہیں بننا چاہیے: طارق فاطمی

اسلام آباد (ٹیسکو نیوز) وزیر اعظم کے معاون خصوصی طارق فاطمی نے کہا ہے کہ پاکستان بھارت کے ساتھ بات چیت کے لیے ہر وقت تیار ہے بھارت چاہے تو بات چیت کا آغاز ہو سکتا ہے تاہم مسئلہ کشمیر اہم ایشو ہے اس کو کسی صورت نظر انداز نہیں کیا جا سکتا امریکہ کو خطے میں امن کے لیے کردار ادا کرنا چاہیے۔ نجی ٹی وی کو انٹرویو میں انہوں نے کہا دو جوہری طاقتوں کو آپس میں بات چیت کرنی چاہیے بھارت غلط بیانی کر کے خود کو بچا نہیں سکتا ایسا لگتا ہے بھارت بات چیت کے لیے تیار نہیں جو ملک اپنے پڑوسی ملک کو تنہا کرنے کی بات کرتا ہے وہ بات چیت کے لیے کیسے تیار ہو سکتا ہے تاہم بھارت کو اس پر سنجیدگی سے سوچنا چاہیے۔ دہشتگردی اور عسکریت پسندی نے سب سے زیادہ مسلمان ملکوں کو نقصان پہنچایا۔ اسلامی فوجی اتحاد کسی ملک نہیں بلکہ دہشتگردی کے خلاف ہے اس اتحاد میں انٹیلی جنس اور تجربات کی شیئرنگ ہو گی یہ اتحاد کسی مسلم ملک کے خلاف کام نہیں کرے گا ہم چاہتے ہیں کہ اس سے مسلم ممالک میں تعاون بڑھے اور ان کے تعلقات میں بہتری آئے۔ اسلامی فوجی اتحاد پر اعتراض کی شاید وجہ یہی ہے ابھی تک اس کے ٹی او آرز واضح نہیں کیے گئے۔الطاف حسین نے پاکستان کو بہت نقصان پہنچایا اگر حکومت پاکستان اسکے خلاف کاروائی کرنا چاہتی ہے تو کسی ملک کو اس میں رکاوٹ نہیں بننا چاہیے پاکستان افغانستان میں امن کا خواہاں ہے افغانستان میں امن کے لیے ہر کوشش کی حمایت کریں گے افغانستان میں منفی سرگرمی کا اثر پاکستان پر پڑتا ہے روس افغانستان کے حوالے سے بہتر کام کر رہا ہے پاکستان افغان بات چیت ہاٹ لائن پر آگے بڑھ رہی ہے۔