قومی اسمبلی میں اپوزیشن کا شدید احتجاج ، گو نواز گو ، استعفیٰ دو کے نعرے

اسلام آباد ( جیوعوام) اپوزیشن ارکان کی جانب سے ایجنڈے کی کاپیاں پھاڑ دی گئیں ، ڈاکو ڈاکو کے نعرے ، ڈپٹی سپیکر اپوزیشن کو خاموش کرانے میں ناکام.. قومی اسمبلی کا گرما گرم اجلاس آج صبح شروع ہوا ، ایوان استعفی دو کے نعروں اور گو نواز گو سے گونج اٹھا ۔ اپوزیشن ارکان نے خوب شور شرابا کیا ۔ ڈپٹی سپیکر کی ڈائس کے سامنے ایجنڈے کی کاپیاں بھی پھاڑ دیں ، خورشید شاہ نے وزیر اعظم سے استعفیٰ کا مطالبہ کیا ۔ لیگی رہنما شیخ آفتاب نے جواب دیا وزیر اعظم استعفیٰ نہیں دیں گے ۔ پاناما کا ہنگامہ ابھی تھما نہیں ہوا ، قومی اسمبلی میں خوب شور شرابا ہوا ۔ اپوزیشن ارکان سیاہ پٹیاں باندھ کر شریک ہوئے اور گو نواز گو استعفی دو کے نعرے لگائے ۔ خورشید شاہ نے اس موقع پر کہا نواز شریف استعفیٰ دے کر پارلیمنٹ بچائیں جس پر لیگی رہنما شیخ آفتاب نے جارحانہ خطاب کیا اور اپوزیشن پر خوب برسے ۔ شیخ آفتاب کا خطاب جاری تھا تو اپوزیشن ارکان ڈپٹی سپیکر کی ڈائس کے سامنے جمع ہوگئے اور ایجنڈے کی کاپیاں پھاڑ کر خوب نعرے بازی کی ۔ ڈپٹی سپیکر اپوزیشن اراکین کو نشستوں پر بیٹھنے کا بار بار بولتے رہے لیکن کسی نے ایک نہ سنی ۔ اپوزیشن کا شور شرابا جاری رہا ، ڈپٹی سپیکر نے اجلاس بدھ تک ملتوی کر دیا ۔