سرفراز احمد اسکاٹ لینڈ کو آسان حریف سمجھنے کو تیار نہیں

ایڈنبرا : پاکستانی ٹیم گیئر تبدیل کر کے فیورٹ ٹوئنٹی 20 فارمیٹ میں فتح کیلیے بے چین ہے اور کپتان سرفراز احمد اسکاٹ لینڈ کو آسان حریف سمجھنے کو تیار نہیں۔

آئرلینڈ کو واحد ٹیسٹ میں ہرانے اور انگلینڈ سے سیریز 1-1 سے برابر کرنے کے بعد پاکستانی کرکٹ ٹیم اسکاٹ لینڈ پہنچ چکی ہے،میزبان سے12 اور 13 جون کو ایڈنبرا میں 2 ٹوئنٹی 20میچز کھیلے جائیں گے،دونوں ٹیمیں 11 برس بعد اس طرز میں دوبارہ مدمقابل ہوںگی۔رینکنگ میں پہلی پوزیشن کے حامل گرین شرٹس اپنے فیورٹ فارمیٹ میں بہترین کھیل پیش کرنے کیلیے بے چین ہیں، البتہ کپتان سرفراز احمد نے اپنے کھلاڑیوں کو خبردار کیا کہ اسکاٹ لینڈ کو تر نوالہ نہیں سمجھنا۔ایڈنبرا سے فون پر ایک نجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے انھوں نے کہا کہ ٹی 20 فارمیٹ میں کوئی ٹیم آسان نہیں ہوتی، ہمیں بھی اسکاٹ لینڈ کیخلاف سو فیصد کارکردگی دکھانا ہوگی، حریف ٹیم میں کئی اچھے کھلاڑی موجود ہیں لہذا سخت مقابلے کی توقع ہے۔

یہ بھی پڑھیں :- وزن کم کرنے کا شاندار نسخہ

سرفراز احمد نے کہا کہ لارڈز ٹیسٹ میں شاندار کارکردگی کے بعد ہمارے پاس انگلینڈ میں سیریز جیتنے کا سنہری موقع تھا مگر ایسا نہ ہو سکا جس پر بیحد مایوسی ہوئی، لیڈز ٹیسٹ کی پہلی اننگز میں بیٹنگ لائن بری طرح ناکام ہوئی جس کا میچ پر بہت زیادہ اثر پڑا،خسارے کا شکار ہونے کے بعد ہمارے بیٹسمین دوسری باری میں بھی اچھا کھیل پیش نہ کر سکے ، انھوں نے کہا کہ اس نتیجے سے ہٹ کر دیکھیں تو انگلینڈ کی مشکل کنڈیشنز میں سیریز سے ہمارے نوجوان کھلاڑیوں کو بہت کچھ سیکھنے کا موقع ملا جس سے مستقبل میں فائدہ ہوگا۔

یہ بھی پڑھیں :- چوہدری نثار کے مستقبل کا فیصلہ کب ؟

ایک سوال پر سرفراز احمد نے کہا کہ لیڈز ٹیسٹ میں ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کا فیصلہ مجھ سمیت پوری ٹیم مینجمنٹ کا تھا، میں اب بھی اسے غلط نہیں سمجھتا،کنڈیشنز بیٹنگ کیلئے اچھی تھیں، انگلش کپتان کا بھی یہی کہنا تھا کہ وہ بھی پہلے اپنے بیٹسمینوں کو ہی آزماتے، ہماری بیٹنگ اچھی نہیں رہی اس لیے ناکام رہے، اسی کے ساتھ میزبان بولرز کو بھی کریڈٹ دینا چاہیے جنھوں نے بہترین لائن و لینتھ پر بولنگ کی۔