پمز ہسپتال میں زیرِ علاج کورونا وائرس سے متاثرہ خاتون کے شوہر میں بھی کورونا وائرس کی تصدیق

اسلام آباد کے پمز ہسپتال میں زیرِ علاج کورونا وائرس سے متاثرہ خاتون کے شوہر میں بھی کورونا وائرس کی تصدیق ہوگئی ہے۔ متاثرہ خاتون اور اسکے شوہر کو پمز ہسپتال کے آئسولیشن وارڈ میں داخل کر لیا گیا ہے جس کے بعد ہسپتال میں کوروناوائرس کے مریضوں کی تعداد 4ہوگئی ہے۔ واضح رہے کہ کورونا وائرس سے متاثرہ خاتون گزشتہ روز امریکا سے اسلام آباد پہنچی تھی جہاں اس میں وائرس کی موجودگی کی تصدیق کی گئی تھی جس کے بعد اسے پمز ہسپتال میں منتقل کیا گیا تھا، ڈاکٹرز نے ابتداء میں اسکی حالت تشویشناک بتائی تھی، تاہم بعد میں اسکی حالت سنبھل گئی تھی اور ڈاکٹرز نے بتایا تھا کہ 2دن میں مریضہ کو ڈس چارج کردیا جائے گا لیکن اب خاتون کے شوہر میں بھی کورونا وائرس کی تصدیق ہو گئی ہے جس کے بعد دونوں کو آئسولیشن وارڈ مین منتقل کردیا گیا ہے۔

وزارت صحت و ریگولیشن نے پاکستان میں کورونا وائرس کی تازہ ترین صورتحال جاری کرتے ہوئے بتایا کہ سندھ میں وائرس سے متاثرہ تین افراد مکمل صحتیاب ہوگئے ہیں اور انہیں اسپتال سے فارغ کر دیا گیا ہے۔کورونا کے سب سے زیادہ 13 کیسز سندھ میں ہیں، بلوچستان میں 6 ،اسلام آباد میں 4 اور گلگت بلتستان میں 3 مریض ہیں۔ زیادہ تر مریضوں کی حالت خطرے سے باہر ہے اور تاحال کسی بھی مریض کی موت واقع نہیں ہوئی۔
ھ*کورونا وائرس کے پھیلاؤ کو روکنے کے لیے ملک بھر میں تعلیمی اداروں، شادی ہالز اور سینما گھروں کو بند کردیا گیا ہے جبکہ عوامی اجتماعات اور تقریبات پر پابندی لگادی گئی ہے۔لاہور، اسلام آباد اورکراچی کے سوا تمام ایئرپورٹس پر فلائٹس آپریشن معطل کردیے گئے ہیں۔ کورونا وائرس کے باعث ملک میں بہت سی عوامی و معاشی سرگرمیاں مفلوج ہوکر رہ گئی ہیں۔