وزیراعلیٰ سندھ مراد نے صوبے میں مکمل لاک ڈاؤن کا باقاعدہ اعلان کردیا

وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے سندھ میں مکمل لاک ڈاؤن کا اعلان کردیا ہے، انہوں نے کہا کہ صوبے بھر میں 15روز کیلئے لاک ڈاؤن کردیا ہے، سندھ میں آج رات12 بجے سے مکمل لاک ڈاؤن ہوگا،ایک گاڑی میں ڈرائیور کے ساتھ صرف ایک شخص سفر کرسکے گا۔ تفصیلات کے مطابق وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے سندھ میں مکمل لاک ڈاؤن کا باقاعدہ اعلان کردیا ہے۔
لاک ڈاؤن سے متعلق تمام ضلعی حکومتوں کو مراسلہ بھی کردیا گیا ہے، جس میں ہدایت کی گئی ہے کہ صوبے بھر میں 15روز کیلئے لاک ڈاؤن کردیا ہے، سندھ میں آج رات12بجے سے مکمل لاک ڈاؤن ہوگا۔ لوگوں کو بلاضرورت گھروں سے نکلنے کی ضرورت نہیں ہوگی۔ ایک گاڑی میں ڈرائیور کے ساتھ صرف ایک شخص سفر کرسکے گا،اسی طرح اگر کسی نے ہسپتال جانا ہو تو گاڑی میں صرف تین افراد کو جانے کی اجازت ہوگی۔

اگر کوئی شخص کسی کام سے باہر نکلے تو شناختی کارڈ اپنے پاس رکھے۔اسی طرح ترجمان سندھ حکومت مرتضیٰ وہاب نے بتایا کہ سندھ میں کورونا مریضوں کی تعداد 333 ہوگئی، زائرین میں کیسز کی تعداد210 ہے۔ جبکہ سندھ میں نئے کیسز کی تعداد میں ابھی کمی ہونا شروع ہوگئی ہے۔ دوسری جانب کراچی میں رینجرز حکام نے شہریوں کو ہدایت کی ہے کہ تمام شہری اپنے گھروں میں رہیں تاکہ کورونا کا مقابلہ کیا جاسکے۔
دوسری جانب معاون خصوصی برائے صحت ڈاکٹر ظفر مرزا نے پریس کانفرنس میں بتایا کہ کلوروکوئن سے متعلق سوشل میڈیا پر خبریں گردش کررہی ہیں کہ مارکیٹ سے یہ دوا غائب ہوگئی ہے، لیکن گھبرانے کی ضرورت نہیں ہے۔ کورونا کے علاج کیلئے ملیریا کی دوائی کلوروکوئن کی ایکسپورٹ پر پابندی عائد کردی ہے۔ پاکستان میں کلوروکوئن کی تیار دوائی اور خام سٹاک سب موجود ہے۔
لیکن اس کے شواہد نہیں ملے کہ کلوروکوئن سے مریض ضروری ٹھیک ہوگا۔ وائرس کےعلاج کیلئے کلوروکوئن کے استعمال پر ماہرین کی رائے لے رہے ہیں۔ کہ کورونا کے علاج کیلئے کلوروکوئن کو کب کیسے اور کتنی مقدار میں اور کس کے مشورے سے استعمال کرنا ہے، یہ سب دیکھا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ یہ شواہد نہیں کہ کلوروکوئین کھانے سے کورونا سے محفوظ رہیں۔
انہوں نے کہا کہ سرکاری ویب سائٹ پر ڈیٹا گھنٹے کے حساب سے اپ ڈیٹ کیا جائےگا۔ پاکستان میں اس وقت مشتبہ مریضوں کی تعداد 5650 ہے، جبکہ تصدیق شدہ کیسز 646 ہیں۔ پنجاب میں کورونا وائرس سے بیمار افراد کی تعداد 152، سندھ 292، بلوچستان میں 104 ہے۔ خیبرپختونخوا میں 31، گلگت بلتستان میں کورونا کے مریضوں کی تعداد 55 ہے۔ آزاد جموں کشمیر میں 1 اور اسلام آباد میں کورونا کے11 مریض ہیں۔ تین لوگ اس بیماری سے انتقال کرگئے ہیں، انہوں نے کہا کہ5 ہزار ڈاکٹرز کو کورونا وائرس کے علاج کی تربیت دی جائے گی۔ پھر اس سے مزید ڈاکٹرز کو تربیت کا سلسلہ جاری رہے گا۔