2مہینوں کے بعد کوروناوائرس کے ابتدائی مرکز وہان کا داخلی راستہ کھل گیا

چین کے شہر ووہان کے داخلی راستوں کو تقریبا دو ماہ کے لاک ڈاون کے بعد کھولا گیا ہے۔عالمی وبا قرار دیئے جانیو الے کورونا وائرس کے ابتدائی مرکز کورونا وائرس کا داخلی راستہ کھول دیا گیا ہے۔کورونا وائرس کے بارے میں لوگوں تک تب پتہ چلا جب اس نے وہان میں اپنی تباہی کا سلسلہ شروع کیا۔ اعداد و شما رکے مطابق وہان کو دوبارہ اس وقت کھولا گیا ہے جب وہاں کورونا وائرس کو کوئی نیا کیس رپورٹ نہیں ہوا ہے۔عالمی خبررساں ایجنسی کے مطابق ووہان شہر میں داخل ہونے کیلیے تین لینز کو ٹریفک

کی غرض سے کھولا گیا ہے۔خبررساں ایجنسی کے مطابق ووہان میں چند کاریں داخل ہوئی ہیں لیکن تاحال کسی بھی گاڑی کو شہر باہر نہیں جانے دیا گیا ہے۔وہان سے شروع ہونے والے کورونا وائرس نیا س وقت پوری دنیا کو اپنی لپیٹ میں لیا ہوا ہے جس کے بعد ابھی تک اس سے متاثرہ افراد کی تعداد 5 لاکھ 97 ہزار سے زیادہ ہو گئی ہے جبکہ27 ہزار سے زیادہ افراد اس سیہلاک ہو چکے ہیں۔وہان کو ایک ایسے وقت میں کھولا گیا ہے جب دنیا کے باقی ممالک میں کورونا وائرس کی وجہ سے لاک ڈاون کر دیا گیا ہے۔ابتدا میں جب وہان میں کورونا وائرس کی خبریں میڈیا پر آرہی تھیں تو دیگر ممالک نے اس کو سنجیدہ نہیں لیا بلکہ چین کا مذاق اڑایا جاتاتھا، لیکن چین نے دومہینوں میں کورونا وائرس کا شکست دے کر وہان کو دوبارہ کھول دیا ہے۔ یاد رہے کہ ایسے ممالک بھی منظر عام پر آ چکے ہیں جہاں اموات کی تعداد چین سے بھی کہیں زیادہ ہو گئی ہے۔لیکن اب چین کے شہر ووہان کے داخلی راستوں کو تقریبا دو ماہ کے لاک ڈاون کے بعد کھولا گیا ہے۔عالمی وبا قرار دیئے جانیو الے کورونا وائرس کے ابتدائی مرکز کورونا وائرس کا داخلی راستہ کھول دیا گیا ہے۔