سندھ حکومت 2 دن میں فیصلہ کرے ، تاجروں نے ڈیڈ لائن دے دی

حکومت نے دو دن میں فیصلہ نہ کیا تو دکانیں کھول دیں گے، تاجر برادری نے سندھ حکومت کو ڈیڈ لائن دے دی۔ تفصیلات کے مطابق کراچی کے تاجروں نے سندھ حکومت کو دو روز میں کاروباری مراکز کھولنے سے متعلق فیصلے کرنے کا الٹی میٹم دے دیا ہے۔ سرابرہ کراچی تاجر اتحاد عتیق میر نے کہا کہ کورونا وائرس کا پھیلاؤنہیں چاہتے تاہم کارروباری مراکز کھولے جائیں۔
حکومت کی جانب سے دو دنوں میں فیصلہ نہ کیا گیا تو دکانیں کھول لیں گے۔ ان کا کہنا تھا کہ اگر کوئی دکاندار احتیاطی تدابیر کی خلاف ورزی کرتا ہے تو خود ذمہ دار ہوگا، رش لگنے پر دکان کو سیل کیا جائے ۔ حکومت دکانیں کھولے گی تو معلوم ہو گا احتیاط برتی جا رہی ہے کہ نہیں۔

واضح رہے اس سے قبل بھی تاجر د کانیں کھولنے کی دھمکی دے چکے ہیں ۔ سندھ حکومت کی جانب سے تاجروں کو ایس او پی کے تحت کام کی اجازت دینے کا اعلان کیا تھا ۔

چھوٹے تاجر ہوم ڈیلیوری کر سکیں گے۔ ترجمان وزیراعلیٰ سندھ کی جانب سے بتایا گیا تھا کہ مرادعلی شاہ ، سید ناصر حسین شاہ ، امتیاز شیخ پر مشتمل کمیٹی قائم کردی گئی ہے ۔ جو 24 گھںٹوں میں تاجروں کی مشاورت کے بعد ایس او پی بنائے گی۔ وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ کا کہنا ہے کہ چھوٹے تاجروں کو روٹیشن کی بنیاد پر دکان کھولنے کی تجویز دی جائے گی ۔ انہوں نے کہا کوشش کریں گے کہ ہفتے میں دن بانٹ لیں، کہ کس دن کون سا شعبہ کھلا رہے گا۔ تاہم ابھی تک حکومتی کی جانب سے باقاعدہ اجازت نہ ملنے پر تاجر رہنماؤں نے 2 روز میں دکانیں کھولنے کا اعلان کر دیا ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ حکومت فیصلہ نہیں کرے گی ت و دکانیں کھول دیں گے۔