پنجاب میں لاک ڈاؤن میں9 مئی تک توسیع، دکانوں کیلئے نئے اوقات کار جاری

وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار نے کہا ہے کہ لاک ڈاؤن میں توسیع کا فیصلہ اجتماعی مشاورت سے کیا گیا ہے۔ کورونا کا پھیلاؤروکنے کے لئے لاک ڈاؤن میں توسیع ناگزیر ہے۔ پنجاب میں بھی لاک ڈاؤن میں 9 مئی تک توسیع کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ رمضان المبارک کے دوران دودھ، دہی کی دکانوں، کریانہ سٹوروں، تندوروں اور بیکریوں کو سحری کے اوقات میں سحری صبح 2 بجے سے صبح 4 بجے تک کھولنے کی اجازت دے دی گئی ہے۔
رمضان المبارک کے دوران اجتماعی سحری واجتماعی افطاری پر پابندی ہوگی۔ گروسری سٹورز،کریانہ سٹورز، ڈیپارٹمینٹل سٹورز اور سپرمارکیٹس (صرف گروسری، پھل اورسبزیوں کے سیکشن) صبح 9 بجے سے شام 5 بجے تک کھلیں رہیں گے۔ آپٹیشنزشاپس، بیکریاں، زرعی ادویات، بیچ، کھاد کی دکانیں اور آٹو ورکشاپس بھی صبح 9 بجے سے شام 5 بجے تک اوپن رہیں گی۔

زرعی مشینری کی ورکشاپس، سپیئر پارٹس کی شاپس اور وینڈرزکو بھی مقررہ اوقات میں کام کرنے کی اجازت ہوگی۔

دودھ دہی کی دکانیں، پولٹری اورمرغی کے گوشت کی دکانیں معمول کے مطابق صبح 9 بجے سے رات 8 بجے تک کھلی رہیں گی۔ پبلک ٹرانسپورٹ بند رہے گی۔ مارکیٹیں، شاپنگ مالز، ریسٹورنٹس اور نجی و سرکاری دفاتر بند رہیں گے۔ میڈیکل سٹورزاور فارمیسی کھلی رہیں گی۔ مساجد کے لئے جاری 20 نکاتی اعلامیہ پر عملدرآمد یقینی بنایا جائے گا- مقامی سطح پر کمیٹیاں مساجد کے لئے ایس او پیز پر عملدرآمد کی مانیٹرنگ کریں گی۔
رمضان المبارک میں شہریوں کو بہت احتیاط کرنے کی ضرورت ہے، اسی لئے حکومتی اقدامات پر عمل کرنا عوام کے مفاد میں ہے۔ واضح رہے وفاقی حکومت نے ملک گیر لاک ڈاؤن میں 9 مئی تک توسیع کردی ہے۔ ملک بھر میں کورونا ٹیسٹنگ کی صلاحیت بھی بڑھا رہے ہیں۔ وفاقی وزیر منصوبہ بندی اسد عمر نے کہا کہ رمضان اور مئی کا مہینہ فیصلہ کن مہینہ ہے، اگر ہم نے احتیاطی تدابیر پر عمل کیا تو عید کے بعد معاشرہ پھر عام زندگی کی طرف واپس چلا جائے گا، لیکن خدانخواستہ ہم نے بداحتیاطی کی تو پھر ہوسکتا ہے کہ ہمیں عید کے موقع پر مزید بندشیں لگانا پڑیں۔