وفاقی حکومت نے صوبوں کو چند ہزار مشتبہ مریضوں کے ایڈریس دے دیے

وفاقی حکومت نے صوبوں کو چند ہزار مشتبہ مریضوں کے ایڈریس دے دیے، صوبائی حکومتوں کو ایڈریس ٹریک اینڈ ٹریس سسٹم کے تحت دیے گئے، صوبائی حکومتیں ان مریضوں کے کورونا ٹیسٹ کروائیں گی۔ معاون خصوصی ڈاکٹر ظفر مرزا نے میڈیا بریفنگ میں بتایا کہ دنیا بھر میں کورونا کے 29 سے زائد کیسز رپورٹ ہوچکے ہیں، جبکہ دنیا میں 2 لاکھ سے زائد ہلاکتیں ہوچکی ہیں۔
پاکستان میں ابھی تک ایک لاکھ 44 ہزار 365 کیسز کرچکے ہیں۔ جس میں 12723 کنفرم کیسز رپورٹ ہوئے ہیں۔ گزشتہ 24 گھنٹے میں 6 ہزار218 ٹیسٹ کیے گئے، جس میں پاکستان میں گزشتہ 24 گھنٹے میں 783 نئے کیسز رپورٹ ہوئے۔ اسی طرح مزید 16نئی اموات ہوئی ہیں، جس سے ملک میں اب تک 269 افراد کورونا سے جاں بحق ہوچکے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان میں 80 فیصد کیسز مقامی ٹرانسمیشن کے ہیں۔

رمضان میں ہمارا سلوگن ہے کہ اپنے گھروں کو اپنی مساجد بنائیں، عوام مساجد میں جانے سے گریز کریں۔انہوں نے کہا کہ صوبائی حکومتوں کو مشتبہ مریضوں کے چند ہزار ایڈریس دیے ہیں، ان افراد میں کورونا کا شبہ ہے،صوبائی حکومتیں ان مریضوں کے کورونا ٹیسٹ کروائیں گی، روزانہ کی بنیاد پر ٹیسٹوں میں اضافہ کر رہے ہیں،امید آئندہ دنوں صورتحال میں کچھ استحکام پیدا ہوگا۔
انہوں نے کہا کہ این ڈی ایم اے تمام ہسپتالوں کو براہ راست سامان کی سپلائی کررہی ہے، این ڈی ایم اے کی ویب سائٹ پر تمام تفصیلات موجود ہیں۔ذرائع کا کہنا ہے کہ صوبائی حکومتوں کو ایڈریس ٹریک اینڈٹریس سسٹم کے تحت دیے گئے، صوبائی حکومتیں ان مریضوں کے کورونا ٹیسٹ کروائیں گی۔ٹریک اینڈ ٹریس سسٹم کی کامیابی سے کورونا وائرس کا پھیلاؤ روکا جاسکتا ہے۔کیونکہ مقامی سطح پر کورونا وائرس پھیلنے سے مقامی مریضوں کی تعداد 80 فیصد تک پہنچ چکی ہے۔اس لیے وزیراعظم عمران خان نے گزشتہ روز ٹریک اینڈ سسٹم بھی متعارف کروادیاہے۔