لاہور کے تاجروں کا 10مئی کو مارکیٹس کھولنے کا فیصلہ

لاہور کے تاجروں نے 10مئی کو مارکیٹس کھولنے کا فیصلہ کرلیا ہے۔تفصیلات کے مطابق ۔لاہور چیمبر میں 100 سے زائد مارکیٹوں اور انجمن تاجران کے عہدیداروں کا مشاورتی اجلاس ہوا جس میں تاجروں نے مطالبہ کیا کہ مارکیٹوں اور چھوٹی انڈسٹری کے لیے لاک ڈاؤن فوری طور پر کھولا جائے۔ لاہور میں تمام بڑی مارکیٹس کے صدور نے ازخود مارکیٹس کھولنے کا فیصلہ کر لیا ہے۔
لاہور چیمبر کے صدر عرفان اقبال شیخ نے کہا ہے کہ 10 مئی کو دکانیں کھولنے کی اجازت نہ دی گئی تو جیل بھرو تحریک شروع کریں گے ۔ عرفان اقبال شیخ نے کہا ہے کہ اگر 9 مئی کو ریلیف نہ دیاگیا تو تاجر ازخود دکانیں کھولنے کی طرف جائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ حکومت کی طرف سے تاجروں کو فوری طور پر مارکیٹس کھولنے کی اجازت دی جائے,تاجروں نے مطالبہ کیا ہے کہ حفاظتی اقدامات کے ساتھ 9مئی کے بعد کاروبار کرنے کی اجازت دی جائے، انجمن تاجران کا کہنا ہے کہ ہول سیل اور دیگر مارکیٹوں کو ہفتے میں چار دن کاروبار کی اجازت دی جائے،صدر اعظم کلاتھ مارکیٹ نے کہا ہے کہ 10 مئی کو اعظم کلاتھ مارکیٹ کھول دیں گے اگر حکومت ایس او پی بنا کر دیں گی تو عمل کریں گے۔

قبل ازیں جماعت اسلامی کے ضلعی امیرانجینئرعظیم رندھاوانے حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ تاجروں کو ریلیف دیا جائے ۔ تاجر تنظیمات کی مشاورت سے ملک بھر کی مارکیٹوں کو حفاظتی اقدامات کے ساتھ مرحلہ وار کھولنے کی حکمت عملیسے ترتیب دی جائے۔تاجر و صنعتکار طبقہ اب مزید مارکیٹیں بند رکھنے کا متحمل نہیں ہو سکتا،چھوٹے تاجروں کے کم یونٹس کے بجلی کے کمرشل میٹرز اور گیس میٹرز کے دو مہینوں کے بلز ختم کیے جائیں، اسی طرح صنعتکاروں کے دو مہینے کے یوٹیلٹی بلز موخر کرتے ہوئے اگلے چھ مہینے میں قسطوں میں وصول کیے جائیں اور تمام قرضوں کے سود ختم کیے جائیں،تین مہینے کے عرصے کے تاجروں پر مختلف قسم کے ٹیکسز ختم کیے جائیں۔