ڈریپ نےچینی ویکسین’کین سائنو‘ کے ہنگامی استعمال کی منظوری دے دی

پاکستان میں چینی ویکسین’کین سائنو‘ کے ہنگامی استعمال کی منظوری دے دی گئی ۔ تفصیلات کے مطابق ڈرگ ریگولیٹری اتھارٹی آف پاکستان (ڈریپ) نے چین میں تیارہ کردہ کورونا ویکسین ’کین سائنو‘ کے ہنگامی استعمال کی منظوری دے دی ہے ۔ کین سائنو کی ہنگامی حالات میں منظوری ڈریپ کے رجسٹریشن بورڈ نے دی۔
اس حوالے سے بتایا گیا ہے کہ کین سائنو ویکسین کے فیز تھری کلینکل ٹرائلز پاکستان سمیت دیگر ممالک میں منعقد ہوئے تھے۔ ویکسین کے حوالے سے بتایا گیا ہے کہ ‘چینی کورونا ویکسین ‘کین سائنو بائیو’ 60 سال سے زائد عمر کے افراد کو بھی لگائی جا سکے گی’ خیال رہے کہ اس سے قبل یہ خبر سامنے آئی تھی کہ کین سائنو کے پاکستانی عوام پر کلینکل ٹرائل کے نتائج مثبت آئے ہیں۔
سربراہ اوجھا کووڈ لیبارٹری پروفیسرسعید خان کے مطابق یہ ویکسین 60 سال سے زائد عمر کے افراد کو بھی لگائی جاسکے گی ۔ واضح رہے کہ اس سے قبل چین کی کورونا ویکسین سائنوفارم کو پاکستان میں استعمال کی اجازت دی گئی تھی ۔ اس حوالے سے بتایا گیا تھا کہ ڈریپ نے چینی کمپنی سائینو فارم کی کورونا ویکسین کے ہنگامی استعمال کی اجازت دے دی ہے۔ منظوری کے لیے سائینو فارم نے این آئی ایچ کے ذریعے اجازت کے لیے درخواست دی تھی، جس پر ڈریپ رجسٹریشن بورڈ کا اجلاس ہوا۔
14 سے 18 جنوری تک جاری رہنے والے اجلاس میں سائنوفارم کی ویکسین کے بارے میں مکمل جانچ پڑتال کے بعد پاکستان میں چینی ویکسین کی منظوری دی گئی ہے۔ اجازت ملنے کے بعد اب چینی کورونا ویکسین پاکستان میں استعمال ہو سکے گی، سائینو فارم نے کورونا ویکسین چینی حکومت کے اشتراک سے تیار کی ہے، اور یہ چینی نیشنل میڈیکل پراڈکٹس ایڈمنسٹریشن سے رجسٹرڈ ہے۔
سائینو فارم کی کورونا ویکسین کی کامیابی کا مجموعی تناسب 79 فی صد ہے، پاکستان نے پہلے فیز کے لیے کورونا ویکسین سائینو فارم سے لینے کا اعلان کیا تھا، پاکستان سائینو فارم سے کورونا ویکسین کی 12 لاکھ ڈوز خریدے گا۔ واضح رہے کہ چین نے کورونا وائرس سے بچاؤ کے لیے ویکیسن کی لاکھوں خواراکیں تیار کر لیں، شینجن ائیرپورٹ پر ویکیسن کی ترسیل یقینی بنانے کے لیے بھرپور انتظامات کیے جا رہے ہیں۔ ڈریپ کی جانب سے منظوری کے بعد چین نے پاکستان کو ویکسین فراہم کردی تھی جس کی ویکسینیشن بھی شروع کی جا چکی ہے۔