سینیٹ انتخابات جیتنے کیلئے پی ٹی آئی اور ق لیگ کی مشترکہ حکمت عملی تیار

تحریک انصاف اور مسلم لیگ ق نے سینیٹ انتخابات جیتنے کیلئے مشترکہ حکمت عملی تیار کرلی، ق لیگ اور پی ٹی آئی کی صوبائی قیادت ارکان اسمبلی سے رابطے کریں گے، پنجاب میں مشترکہ حکمت عملی کے تحت انتخابات میں اپوزیشن کو شکست دیں گے۔ ذرائع کے مطابق وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار اور مسلم لیگ ق کے سینئر مرکزی رہنماء اسپیکر پنجاب اسمبلی چودھری پرویز الٰہی کے درمیان ملاقات ہوئی۔
ملاقات میں وزیر قانون پنجاب راجہ بشارت اور چودھری مونس الٰہی بھی شریک تھے۔ اس موقع پر ملاقات میں ارکان سے رابطوں پر بریفنگ اور مشاورت کی گئی۔ ملاقات میں عثمان بزدار، چودھری پرویزالٰہی اور مونس الٰہی نے سینیٹ کیلئے لائحہ عمل کو حتمی شکل دے دی ہے۔
وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے کہا کہ تحریک انصاف اور مسلم لیگ(ق) کے رہنماء ارکان سے رابطے کرینگے۔

دوسری جانب وفاقی وزیر اطلاعات سینیٹر شبلی فراز نے سپریم کورٹ کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ہماری پارٹی نے 2013 میں بھی بہت جد جہد کی، آج کی پروسیڈنگ پر پیپلز پارٹی کو مبارکباد دیتا ہوں۔ پیپلز پارٹی کے وکیل نے کہا ووٹ کو خفیہ ہونا چاہیے، رضا ربانی میثاق جمہوریت کوڑے کی ٹوکری میں پھینک دیا ہے۔ رضا ربانی نے بینظیر بھٹو کے معاہدے کو ڈس آن کرلیا ہے۔
انہوں نے کہا کہ پیپلز پارٹی نے یوسف گیلانی کی جیت کا دعویٰ کر رہی ہے ، پیپلزپارٹی نے خزانے کا دروازہ کھول لیا ہے، پیپلز پارٹی کے پاس اکثریت نہیں ۔ انہوںنے کہاکہ پیپلز پارٹی بولیاں لگا رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ پیپلز پارٹی کی جمہوریت کیلئے بڑی جدوجہد ہے،ذولفقار علی بھٹو سے بینظیر تک جان کی قربانی دی گئی۔ وزیراطلاعات نے کہا کہ پیپلز پارٹی الیکشن میں شفافیت کی مخالفت کر رہی ہے، ضمنی الیکشن جو پارٹیاں جیتی وہ انہی کی سیٹیں تھی۔ میں چاہتا ہوں میری اولاد عمران خان جیسی بنے، تحریک انصاف واحد جماعت ہے اپنے 20 ممبران کو بکنے پر باہر نکالا۔