وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی کی بھارت کو مذاکرات کی مشروط پیشکش

وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی نے ترقی، امن واستحکام کیلئے بھارت کو مذاکرات کی مشروط پیشکش کردی۔ انہوں نے کہا کہ بھارت مذاکرات کیلئے 5 اگست کے فیصلے پرنظرثانی کرے، بھارت کو مذاکرات کیلئے کشمیریوں کیلئے سازگارماحول پیدا کرنا ہوگا۔ انہوں نے یواے ای میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ بھارتی ہم منصب سے ملاقات طے نہیں۔
بھارت5 اگست کے فیصلے پرنظرثانی کرے پاکستان بھارت سے مذاکرات کیلئے تیار ہے۔ بھارت مذاکرات کی میز پر بیٹھنے کیلئے کشمیریوں کیلئے سازگارماحول پیدا کرے۔ انہوں نے کہا کہ دونوں ایٹمی قوتوں کے پاس مذاکرات کے علاوہ کیا کوئی اورراستہ ہے؟افغانستان میں امن ہوگا تواس کا براہ راست فائدہ پاکستان کا ہوگا۔
انہوں نے کہا کہ بھارت کے ساتھ مسائل ہیں آئیں اور بیٹھ کر بات کرے۔

بھارت کے ساتھ بیک چینل کی کیا ضرورت ہے؟ شرمانا اورپردہ کیسا ہے؟ پاکستان اوربھارت کے درمیان باضابطہ کوئی بیک چینل نہیں ہے۔ شاہ محمود قریشی نے کہا کہ یواےای سے تہران جاؤں گا،ا یران کے بعد ترکی جاؤں گا۔ بھارت مذاکرات کی میزپربیٹھنے کیلئے کشمیریوں کیلئے سازگارماحول پیدا کرے۔ بھارت 5 اگست کے فیصلے پرنظرثانی کرے پاکستان بھارت سے مذاکرات کیلئے تیار ہے۔
جب امن ہوگا توپاکستان میں سرمایہ کاری آئے گی۔ اسی طرح وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی نے متحدہ عرب امارات میں، یکم اکتوبر2021 سے شروع ہونیوالی، بین الاقوامی نمائش (ورلڈ ایکسپو 2020 ) کا دورہ کیا، متحدہ عرب امارات میں تعینات پاکستانی سفیر افضال محمود ،قونصل جنرل دوبئی قونصلیٹ احمد امجد علی اور سفارتخانے کے سینئر افسران بھی وزیر خارجہ کے ہمراہ تھے اس مو قع پر وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا کہ رواں سال یکم اکتوبر 2021 سے شروع ہونیوالی اس بین الاقوامی نمائش میں پاکستانی پویلین کی موجودگی ، پاکستان اور متحدہ عرب امارات کے مابین دہائیوں پر محیط دوستی کا مظہر ہے ،مجھے خوشی ہے کہ متحدہ عرب امارات میں مقیم لاکھوں پاکستانی یہاں کی تعمیر و ترقی میں اپنا بھرپور کردار ادا کر رہے ہیں متحدہ عرب امارات میں منعقدہ اس عالمی نمائش(ایکسپو 2020 ) میں پاکستان کی شمولیت، ہمارے دو طرفہ بڑھتے ہوئے اقتصادی روابط اور باہمی دلچسپی کے شعبہ جات میں تعاون کے فروغ کی واضح مثال ہے دوبئی ایکسپو(2020ء ) کیلئے قائم کیا گیا پاکستانی پویلین، تین ہزار چار سو پچاس سکوائر فٹ پر مشتمل ہے۔