پاکستان نے ایک اور چینی کمپنی سے کورونا ویکسین کی خریداری کا معاہدہ کر لیا

پاکستان نے ایک اور چینی کمپنی سے کورونا ویکسین کی خریداری کا معاہدہ کر لیا ، سائینو ویک نے پاکستان کو حسب ضرورت ویکسین فراہمی کی یقین دہانی کرا دی۔ تفصیلات کے مطابق میڈیا ذرائع کا کہنا ہے کہ پاکستان نے چینی ساختہ ویکسین ’کورونا ویک‘ کی خریداری کا معاہدہ کیا ہے ، پاکستان میں ڈریپ کورونا ویک ویکسین کے ہنگامی استعمال کی اجازت دے چکی ہے جو کہ چینی کمپنی سائینو ویک لائف سائنسز کی تیار کردہ ہے ، کورونا ویک ان ایکٹیویٹڈ ویکسین 2 ڈوزز پر مشتمل ہے اور یہ منفی 2 تا 8 درجہ حرارت پر محفوظ کی جاتی ہے ، لاہور کی ایک نجی کمپنی نے بھی کورونا ویک ویکسین کا اجازت نامہ حاصل کرلیا ہے ، تاہم چینی کمپنی کی طرف سے آغاز میں صرف محدود پیمانے پر کورونا ویکسین فراہم کی جائے گی تاہم آگے چل کر سائینو ویک نے پاکستان کو حسب ضرورت ویکسین فراہمی کی یقین دہانی بھی کرا دی ہے۔
بتایا گیا ہے کہ چین نے گزشتہ برس جولائی 2020ء میں کورونا ویک کے ہنگامی استعمال کی اجازت دی تھی ، اس کے فیز ون اور ٹو کلنیکل ٹرائلز چین میں کیے گئے ، جب کہ فیز 3 ٹرائلز لاطینی امریکا ، یورپ ، ایشیاء ، برازیل ، ترکی ، انڈونیشیا اور فلپائن میں کیے گئے جہاں ترکی کے فیز 3 ٹرائلز میں ویکسین 83اعشاریہ 5 فی صد معیاری ثابت ہوئی، انڈونیشیا کے فیز 3 ٹرائلز میں ویکسین 65 اعشاریہ 3 فی صد معیاری ثابت ہوئی ، ان نتائج کے پیش نظر میکسیکو، تیونس، زمبابوے، آذربائیجان، ملائیشیا، سنگاپور، ہانگ کانگ، فلپائن، تھائی لینڈ پہلے ہی کورونا ویک ویکسین کی منظوری دے چکے ہیں جب کہ انڈونیشیا دسمبر 2020ء میں کورونا ویک ویکسین کی پہلی کھیپ درآمد کر چکا ہے، اس کے علاوہ چینی کمپنی سائینو ویک رواں ماہ مختلف ممالک کو ویکسین کی 7 کروڑ ڈوز فراہم کر چکی ہے۔