مذہبی جماعت کا دھرنا ختم، پاکستان اسٹاک مارکیٹ میں زبردست تیزی

ملک بھر میں مذہبی جماعت کی طرف سے دھرنا ختم ہونے اور غیر یقینی صورتحال سے نمٹنے کے بعد پاکستان اسٹاک مارکیٹ میں زبردست تیزی کی واپسی ہوئی ہے۔100 انڈیکس 486 پوائنٹس بڑھ گیا ہے۔کاروباری ہفتے کے دوسرے روز پاکستان اسٹاک مارکیٹ میں تیزی ریکارڈ کی گئی۔ ٹریڈنگ کے دوران 100 انڈیکس 600 پوائنٹس بڑھ گیا۔
مگر اختتام پر سرمایہ کاروں نے حصص فروخت بھی کیے جس کے باعث مارکیٹ 486 پوائنٹس کے اضافے سے 100 انڈیکس 45 ہزار 399 پوائنٹس کی سطح پر بند ہوا۔اسٹاک مارکیٹ میں زبردست تیزی کے باعث حصص کی مالیت میں 45 ارب روپے کا اضافہ ہوا۔تجزیہ کاروں کے مطابق ملک بھر میں دھرنے کے ختم ہونے اور حالات میں بہتری سے آج ڈاک مارکیٹ میں تیزی ریکارڈ کی گئی ہے۔
گذشتہ روز پاکستان اسٹاک مارکیٹ میں پیرکوشدید مندی کا رجحان دیکھنے میں آیا اور سرمایہ کاروں کی جانب سے حصص فروخت کو ترجیع دینے کے باعث کے ایس ای100انڈیکس 45ہزار کی نفسیاتی حد سے گرتے ہوئے 392.06پوائنٹس کی کمی سی44913.57پوائنٹس کی سطح پرآگیا جب کہ67.28فیصد کمپنیوں کے شیئرز کی قیمتوں میں کمی ریکارڈ کی گئی جس کے نتیجے میں سرمایہ کاروں کو52ارب 86کروڑ94لاکھ روپے کا نقصان اٹھانا پڑا تاہم حصص کی لین دین کے لحاظ سے کاروباری حجم گزشتہ ٹریڈنگ سیشن کی نسبت 109.25فی صد زائد رہا۔

پاکستان اسٹاک مارکیٹ میں پیر کو ٹریڈنگ کے آغاز سے ہی منفی رجحان دیکھنے میں آیااور ملک میں ہڑتال اور امن وامان کے حوالے سے خراب صورتحال کے پیش نظر سرمایہ کاروں نے مارکیٹ سے سرمایہ نکالنے کو ترجیع دی جس کے سبب شدید مندی رہی اور کے ایس ای100انڈیکس دوران ٹریڈنگ 45ہزار کی نفسیاتی حد سے گرتے ہوئی44606پوائنٹس کی نچلی سطح پر آ گیابعد ازاں ریکوری آئی لیکن مجموعی طور پر مندی کا رجحان کاروبار کے اختتام تک برقرار رہا اور کے ایس ای100انڈیکس 392.06پوائنٹس کی کمی سی44913.57پوائنٹس کی سطح پربند ہواجب کہ کے ایس ای30انڈیکس174.88پوائنٹس کی کمی سی18362.90پوائنٹس اور کے ایس ای آل شیئرز انڈیکس191.42پوائنٹس کی کمی سے 30530.86پوائنٹس کی سطح پرآ گیا ۔