شرم کرو! معصوم بچے حکومتی ڈھٹائی اورتاریخی نااہلی کا شکار ہوگئے، مریم نواز

پاکستان مسلم لیگ ن کی مرکزی نائب صدر مریم نواز نے کہا ہے کہ سکولوں میں معصوم بچے حکومتی ڈھٹائی اورتاریخی نااہلی کا شکار ہوگئے، شرم کرو، سکول میں بچوں کی بے ہوشی کا واقعہ بنی گالامحل سے چند میل دور پیش آیا، جہاں کوئی بھی 22 گھنٹے کی لوڈشیڈنگ اور مہنگائی سے متاثر نہیں ہے۔ انہوں نے ٹویٹر پر اسلام آباد کے سکولوں میں بجلی کی طویل لوڈشیڈنگ کے باعث بچوں کے بے ہوشی اور نکسیر پھوٹنے کے واقعات پر اپنے شدید ردعمل میں کہا کہ اسلام آباد کے جس سکول میں معصوم بچوں کے گرمی کی شدت سے بے ہوش اور نکسیر پھوٹنے اور حالت غیر ہونے کے واقعہ پیش آیا وہ سکول بنی گالا محل سے چند میل دور فاصلے پر ہے، جہاں پر کوئی بھی بجلی کی 22 گھنٹے کی لوڈشیڈنگ اور مہنگائی سے متاثر نہیں ہے۔
انہوں نے کہا کہ شرم کرو! معصوم بچے حکومتی ڈھٹائی اورتاریخی نااہلی کا شکار ہوگئے ہیں۔

واضح رہے گزشتہ روز لاہور کے گورنمنٹ جونیئرماڈل سکول ماڈل ٹاؤن میں بچوں کی نکسیر پھوٹ پڑی، جس پر اساتذہ نے ان کو طبی امداد دی، اسی طرح آج اسلام آباد میں بہارکوہ کے علاقے ملپور میں صبح سے بجلی نہ ہونے کے باعث گورنمنٹ فیڈرل اسکول میں 25 کے قریب بچے بےہوش ہو گئے، بچوں کو گرمی کی وجہ سے نکسیر آنا شروع ہو گئی تھی، بچوں کے سر پر پانی ڈال کر نکسیر کو روکنے کی کوشش بھی کی گئی، واپڈا کو اطلاع بھی دی گئی مگر بجلی بحال نہ ہو سکی، بچوں کو طبی امداد دینے کیلئے پاس کے اہسپتال میں منتقل کر دیا گیا ۔
ذرائع ے مطابق اسکول میں کل بچوں کی تعداد 200 ہے، اسکول میں بجلی نہ ہونے کے باعث چھٹی دے دی گئی۔ لاہور سمیت صوبہ بھر میں درجہ حرارت 43 ڈگری سینٹی گریڈ سے بڑھ گیا۔ گرمی کی شدت میں اضافہ سے بچے بھی بلبلا اٹھے۔ شدید گرمی سے اکثر سکولوں میں طلبا کی حالت غیر ہوگئی ۔ والدین نے گرمی کی شدت میں اضافہ پر شدید تحفظات کا اظہارکیا ہے۔ والدین کا کہنا ہے کہ بچوں کو فی الفور نئی کتب اور ہوم ورک دے کر گرمی کی چھٹیاں دی جائیں تاکہ انہیں بڑے نقصان سے بچایا جاسکے۔
والدین کے مطالبے پر حکومت نے سکولوں میں جلد گرمیوں کی چھٹیوں پر غور شروع کردیا ہے۔ یہ ممکن ہے کہ پہلی تا آٹھویں چھوٹی کلاسز کے بچوں کو چھٹیاں کردی جائیں اور بورڈ کے امتحانات دینے والے بچوں کو امتحانات کے بعد چھٹیاں دی جائیں۔