پاکستان نے3 سالوں میں اندرونی بیرونی محاذ پر بڑی کامیابیاں حاصل کیں، عارف علوی

صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے کہا ہے کہ پاکستان نے3 سالوں میں ندرونی وبیرونی محاذ پر بڑی کامیابیاں حاصل کیں، شفاف الیکشن کیلئے انتخابی اصلاحات کو متنازع نہ بنایا جائے، الیکٹرانک ووٹنگ میں پرانے بیلٹ کا نظام بھی شامل ہے، سمندرپارپاکستانیوں کو ووٹ کا حق دینا ضروری ہے، پاک چین تعلقات میں کوئی دراڑ نہیں ڈال سکتا، عالمی برادری افغانستان کو تنہاء نہ چھوڑیں۔
تفصیلات کے مطابق صدر مملکت عارف علوی نے پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ میری گفتگو حال اور مستقبل کے حوالے سے ہے، گزشتہ 3 سالوں میں ملک وقوم میں بہت مثبت تبدیلیاں آئی ہیں، پاکستان کی معیشت ترقی کی جانب گامزن ہے، شورمچانے کی بجائے حقیقت تسلیم کرنی پڑے گی، پاکستان درست سمت کی جانب گامزن ہے، پاکستان میں بہت سی تبدیلیاں آئی ہیں، تیسرے پارلیمانی سال کی تکمیل پرمبارکباد پیش کرتا ہوں، شورمچانے کی بجائے حقیقت تسلیم کرنا پڑے گی، کورونا کے باعث دنیا بھرکی معیشتیں متاثر ہوئیں، کورونا کے دوران پاکستان کی معیشت مستحکم رہی، بہتر حکومتی پالیسیوں کی بدولت معیشت مستحکم رہی، حکومت نے تعمیراتی شعبے کو 36 ارب روپے کی سبسڈی دی، صبر کریں اورسنیں،عوام کو بات سمجھ آگئی ہے یہاں بھی سمجھنی چاہیے۔

اسٹیل،سیمنٹ اور دیگرشعبوں میں ترقی ہوئی۔ صدرمملکت عارف علوی نے کہا کہ تعمیراتی شعبے میں ترقی کا سہرا وزیراعظم کے سر ہے، زرعی شعبے میں 2 اعشاریہ 7 فیصد ترقی ہوئی ہے، زرعی شعبے میں مزید بہتری کی ضرورت ہے، دنیا اس وقت چوتھے صنعتی انقلاب سے گزر رہی ہے، صرف معاشی انقلاب نہیں، فکری انقلاب ہے، حکومتی کارکردگی اور کامیابی کو شورشرابے سے نہیں روکا جاسکتا، کرپشن کے ناسوراور ماضی کی غلط ترجیحات کی وجہ سے ہم ترقی سے محروم رہے، ہم نے ماضی میں ٹیلنٹ کی قدر نہیں کی۔
3 سال میں پاکستان نےاندرونی و بیرونی محاذ پر کامیابیاں حاصل کیں، زرعی شعبے میں مزید بہتری کی ضرورت ہے، نوجوانوں کو تربیت اور روزگار کے مواقع فراہم کیے جا رہے ہیں، اسٹیل اور سیمنٹ سمیت 60 کے قریب انڈسٹری چل پڑی ہے، احساس کفالت، نشوونما اور احساس آمدن اور لنگرخانے جیسے پروگرام شروع کیے گئے، ہم نے لوٹ مار سے توجہ ہٹاکر انسانیت پر فوکس کیا ہے، احساس کفالت پروگرام کے تحت رواں سال 70 لاکھ خواتین کو ماہانہ 2 ہزار روپے دیئے جائیں گے، کامیا ب جوان پروگرام کیلئے 100ارب روپے رکھے گئے ہیں، کامیاب جوان پرگرام کے تحت نوجوانوں کو آسان شرائط پر قرضے دیئے جائیں گے۔