چینی کمپنیوں نے پاکستان میں الیکٹرک گاڑیوں کے منصوبے شروع کردیئے

چینی کمپنیوں نے پاکستان میں الیکٹرک گاڑیوں کے منصوبے شروع کردیئے ، ملک میں فیبریکیٹڈ گھروں کی ٹیکنالوجی کی بھی آمد، پاکستان میں جاری سی پیک کے 12ارب ڈالر کے منصوبے تکمیل کے مراحل میں داخل ہو گئے ۔ تفصیلات کے مطابق معاون خصوصی سی پیک خالد منصور کا کہنا ہے کہ سی پیک کے 12ارب ڈالر کے منصوبے تکمیل کے مراحل میں ہیں، چینی کمپنیوں نے الیکٹرک گاڑیوں کے منصوبے شروع کردیئے پیں اور فیبریکیٹڈ گھروں کی ٹیکنالوجی لیکر آرہی ہیں۔
معاون خصوصی سی پیک خالد منصور نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ سی پیک میں اب تک 25ارب ڈالر کی سرمایہ کاری آچکی ہے اور سی پیک کے 12ارب ڈالر کے منصوبے تکمیل کے مراحل میں ہیں۔معاون خصوصی سی پیک کا کہنا تھا کہ 5کمپنیوں نے الیکٹرک گاڑیوں کے منصوبے شروع کردیئے، ملک میں بہت جلد الیکٹرک گاڑیاں کثیرتعدادمیں نظرآئیں گی۔

خالد منصور نے مزید کہا کہ چینی کمپنی فیبریکیٹڈ گھروں کی ٹیکنالوجی لیکر آرہی ہیں اور چین کی سیرامکس کمپنی ٹائلزکی تیاری کیلئے سرمایہ کاری کررہی ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ چین زراعت میں بہت ترقی کرچکا ہے، گوادرپورٹ فعال ہے،سی پیک فیز ون تکمیل کےمراحل میں ہیں ، سی پیک فیز ٹو میں اسپیشل اکنامک زونز پر توجہ دے رہےہیں۔واضح رہے کہ اس سے قبل یہ خبر بھی سامنے آئی تھی کہ انڈس موٹر نے پاکستان میں ہائبرڈ الیکٹرک گاڑیوں کیلئے 100 ملین ڈالر سرمایہ کاری کا اعلان کیا ہے۔ اس حوالے سے تصدیق کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان کے معاون خصوصی شہبازگل نے سماجی رابطے پر پیغام میں کہا تھا کہ انڈس موٹر ہائبرڈ کاربنانےمیں100ملین ڈالرسرمایہ کاری کرے گی، الیکٹرک، ہائبرڈگاڑیوں سےسرمایہ کاری،روزگارکے نئے مواقع پیدا ہں گے ، یہ سرمایہ کاری ایندھن بچت ، فوسل فیول مد میں زرمبادلہ بچانےکاباعث ہوگی۔
انڈس موٹر کی جانب سے پاکستان میں سرمایہ کاری کا یہ فیصلہ فنانس ایکٹ2021 ،ٹیکسوں اور ڈیوٹیوں میں مراعات کی بنیاد پرکیا۔انڈس موٹر کا کہنا تھا کہ سرمایہ کاری اپ گریڈنگ، توسیع ، پرزوں کی پیداوار کی تیاری کیلئے ہے، انڈس موٹر جلد پہلی لوکل ہائبرڈ الیکٹرک گاڑی تیار کرے گی۔واضح رہے کہ چند روز قبل جاپانی سفیر نے حکومت پاکستان کے آٹو انڈسٹری کیلئے اقدامات کی تعریف کرتے ہوئے کہا تھا کہ پاکستانی برآمدات بڑھانے کیلئے جائیکا کے تعاون سے سرٹیفکیٹ کا اجرا ہوگا۔
وزیرصنعت و پیداوار مخدوم خسرو بختیار سے جاپانی سفیر کی ملاقات ہوئی ، ملاقات میں جاپانی کمپنیوں کی پاکستان میں سرمایہ کاری،تعاون بڑھانے پر تبادلہ خیال کیا گیا۔جاپانی سفیر نے حکومت کے آٹو انڈسٹری کیلئے اقدامات کی تعریف کی ، دوران ملاقات خسروبختیار نے بتایا کہ پاکستان نےاسکیم کےذریعےچھوٹی گاڑی کی قیمتیں کم کی ہیں، ملک میں موبائل ڈیوائس پیداواری صنعت کو بڑھایاجا رہا ہے۔
وزیرصنعت و پیداوار کا کہنا تھا کہ نئی آٹوپالیسی میں پیداوار وبرآمدات پرتوجہ دی جائے گی، کراچی میں 1500 ایکڑ اراضی انڈسٹریل پارک کیلئے مختص کی ہے، آٹوموبیل،انڈسٹریل پارک زون ،موبائل فونز کی پیداوار میں وسیع مواقع ہیں۔اس موقع پر جاپانی سفیر نے کہا جاپانی آٹو کمپنیوں کو پاکستان میں بھاری سرمایہ کاری کرنے کا کہیں گے۔پاکستانی برآمدات بڑھانے کیلئے جائیکا کے تعاون سے سرٹیفکیٹ کا اجرا ہوگا۔